+ Reply to Thread
Page 1 of 2
1 2 LastLast
Results 1 to 15 of 22

Thread: علماء دیوبند اور ان کے علمی آثار

  1. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور ان کے علمی آثار

    علماء دیوبند اور ان کے علمی آثار

    علماء دیوبند نے تفسیرقرآن ، شرح حدیث ، اصول فقہ ، فقہ حنفی ، فرائض ، توحید وعقائد، سیرت وآداب ، اوردیگر علوم وفنون میں ، نیز فرق باطلہ ،عیسائیت ، ملاحده ، دہریت ، قادیانیت ومرزائیت ، شیعہ وروافض ، نیز دین متین کی حفاظت ، مبتدعین کی رد ، اور غیر مقلدین کی بعض سینہ زوریوں کی تردید میں جو کتابیں تالیف کی ہیں ان کی تعداد دو ہزار سے زائد ہیں ، جن میں چهوٹے رسائل سے لے کر کئ کئ جلدوں پر مشتمل ضخیم کتابیں شامل ہیں ، اور یہ مقدار صرف اکابر ومشائخ کی تالیفات کی ہے ، دارالعلوم دیوبند کے دیگر فضلاء و منتسبین کی تالیفات مزید برآں ہیں ، ان تمام کتابوں کی صرف نام کی تفصیل کے لیئے بهی ایک مستقل کتاب ودفتر درکار ہے ، ان اکابر میں سے صرف ایک مصنف حكيم الأمـة مجدِد المـلة حضرت الإمـام أشرف على تهانوى نورالله مرقده کی تصنیفات ایک ہزار سے زائد ہیں ، ان میں سے بعض کتابوں کی دو ۲ سے لے کر باره ۱۲ تک جلدیں ہیں ، یہاں تک کہ حكيم الأمـة رحمه الله کثرت تالیفات میں شیخ جلال الدین سیوطی رحمه الله سے بهی فائق ہیں ، اور اگر میں یہ کہوں تو کوئی مبالغہ نہیں ہو گا کہ حكيم الأمـة رحمه الله کی کتابیں اتقان وتحقیق میں شیخ سیوطی رحمه الله کی کتابوں سے بهی فائق ہیں ، ہاں شیخ سیوطی رحمه الله کی وسعت معلومات اور حیرت افزا تبحر بهی مُسَلم ہے ، اور حكيم الأمـة رحمه الله کی کتابیں اردو اور عربی دونوں میں ہیں ، پهر ان تالیفات کے علاوه حكيم الأمـة رحمه الله کے وه مواعظ وملفوظات بهی ہیں ، جن میں بہت سے علوم ومعارف اور بلند پایہ تحقیقات ہیں ، اب میں صرف اکابر علماء دیوبند کی کتب کا اجمالی تذکره کرتا ہوں

    قرآن مجید سے متعلق علماء دیوبند کی علمی آثار

    1 = ترجمة القرآن بزبان اردو . شیخ الہند مولانا محمود حسن دیوبندی رحمه الله ، اس پر عجیب وغریب فوائد تحریر کرنے کا سلسلہ شروع کیا تها مگر اس کی تکمیل نہ ہو سکی
    2 = تکمله فوائد شیخ الهند . شیخ الإسلام شبير أحمد عثماني رحمه الله ، سوره آل عمران اور سوره مائده سے آخر قرآن تک
    3 = تفسیر بیان القرآن ۱۲حصص . حكيم الأمـة أشرف علي تهانوي رحمه الله ، یہ مبارک تفسیر نفائس جلیلہ وفوائد قَیّمہ اور انتہائی نادر ابحاث پر مشتمل ہے ، اور اردو زبان میں لکهے گئے اہم تفاسیر میں سے ہے
    4 = خلاصة تفسیر بیان القرآن . حكيم الأمـة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    5 = فتح المنّان فی تفسیر القرآن . مولانا عبدالحق دہلوی دیوبندی رحمه الله ، یہ تفسیر آٹھ ضخیم جلدوں میں اردو وعربی دونوں زبانوں کے أبحاث پر مشتمل ہے
    6 = ألبیان فی علوم القرآن . یہ بهی مولانا عبدالحق رحمه الله کی عمده کتاب ہے
    7 = مُشكِلات القرآن . إمام العصر الشيخ أنورشاه الكشميري ، یہ کتاب عربی زبان میں ہے، انتہائی اعلی ابحاث پر مشتمل ہے
    8 = إعجاز القرآن . شيخ الإسلام شبير أحمد عثماني ديوبندي رحمه الله
    9 = ترجمه قرآن مع فوائد تفسیریه . اردو زبان میں ، مولانا عاشق الہی میرٹهی رحمه الله
    10 = حاشیه تفسیر البیضاوی . عربی زبان میں ، مولانا عبدالرحمن اَمروہی رحمه الله
    11 = حاشية تفسیر الجلالین . مولانا حبیب الرحمن دیوبندی رحمه الله
    12 = سَبقُ الغایات فی نَسق الآیات . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    13 = تفسیر معارف القرآن . آٹھ ضخیم جلدوں میں ، مفتی اعظم محمد شفیع دیوبندی رحمه الله ، یہ تفسیر اردو زبان کی مستند اور عام فہم تفسیر ہے
    14 = تفسیر معارف القرآن . علامہ محمد إدریس کاندہلوی رحمه الله
    15 = مقدمة تفسیر القرآن . محدث العصر مولانا یوسف بَنُوری رحمه الله
    16 = یتیمة القرآن فی مشکلات القرآن . محدث العصر علامه محمد یوسف بَنُوری رحمه الله
    17 = رسالہ اسرار قرآنی . قاسم العلوم والخيرات مولانا محمد قاسم نانوتوی رحمه الله ، یہ رسالہ اردو زبان میں ہے ، آیات قبلہ کے اسرار پر مشتمل ہے
    18 = تقریرات متعلقة تفسیر قرآن . مولانا عبید الله سندهی دیوبندی رحمه الله ، ان کے بعض شاگردوں نے قلم بند کی ہے
    19 = حاشیة تفسیر مدارک . بعض علماء دیوبند
    20 = فوائد تفسیریة . مولانا احمد علی لاهوری رحمه الله
    21 = هدیة المهدِیِیّن فی تفسیرآیة خاتم النبیین . مولانا مفتی شفیع دیوبندی رحمه الله
    22 = عقیدة الإسلام في حیاة عیسی عليه السلام . إمام العصر مولانا أنور شاه کشمیری رحمه الله ، اس کتاب میں حضرت عیسی علیہ السلام سے متعلقہ آیات کی تفصیلی شرح کی گئ ہے ، اور بلند پایہ علمی فوائد ومعارف پر مشتمل ہے
    23 = مقدمة تفسیر القرآن . عربی زبان میں ، مولانا سالم دیوبندی رحمه الله
    24 = خاتم النبيين . إمام العصر الشيخ أنور شاه الكشميري رحمه الله ، یہ علمی وتحقیقی کتاب آية خاتم النبيين کی شرح وتفسیر پر مشتمل ہے
    25 = درس تفسیرقرآن . اردو زبان میں ، مولانا حسین علی تلمیذ حضرت گنگوہی رحمهما الله
    26 = معالم العرفان فی دروس القرآن . مولانا صوفی عبد الحمید سواتی رحمه الله ، یہ تفسیر اردو زبان میں ہے ، اور تیس جلدوں پر مشتمل ہے
    27 = ضرورة القرآن . مولانا زاهد الحُسینی تلمیذ حضرت حسین احمد مدنی رحمهما الله
    28 = اشرف البیان فی علوم الحدیث والقرآن . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    29 = آداب القرآن . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    30 = ألتحریر فی أصول التفسیر . مولانا محمد مالک کاندهلوی ابن الشيخ العلامة محمد إدریس کاندهلوی رحمهما الله
    31 = منازل العرفان فی علوم القرآن . مولانا مالک کاندهلوی رحمه الله
    32 = قصص القرآن . چار جلدوں میں ، مولانا حفظ الرحمن سِیوُہاروِی تلمیذ إمام العصر الشيخ أنور شاه الكشميري رحمهما الله
    33 = اردو ترجمہ تفسیر الجلالین . مولانا محمد نعیم دیوبندی رحمه الله
    34 = اردو ترجمہ تفسیر مَدارِکُ التنزیل . مولانا انظرشاه کشمیری ابن الإمام أنور شاه الکشمیری رحمهما الله
    35 = اردو ترجمہ تفسیر ابن کثیر . مولانا انظرشاه کشمیری رحمه الله
    36 = درس قرآن مع اردو ترجمہ . مولانا عبدالحی فاروقی فاضل دیوبند رحمه الله
    37 = تاریخ القرآن . عربی زبان میں ، مولانا عبدالصمد صارم فاضل دیوبند رحمه الله
    38 = درس قرآن . حافظ الحدیث والقرآن مولانا عبدالله درخواستی رحمه الله ، حضرت درخواستی رحمه الله کا یہ تفسیر قرآن کا درس انتہائی نادر علمی وتفسیری فوائد ونکات پر مشتمل ہے
    39 = أرض القرآن . علامه سید سلیمان ندوي رحمه الله
    40 = کشف الرحمن . مولانا احمد سعید دہلوی رحمه الله ، اس تفسیر پر مقدمہ حکیم الإسلام قاری محمد طیب دیوبندی رحمه الله کا ہے
    41 = معارف القرآن . مولانا قاضی محمد زاهد الحسینی رحمه الله
    42 = تعلیم القرآن . مولانا قاضی محمد زاهد الحسینی رحمه الله
    43 = لغات القرآن . مولانا قاضی محمد زاهد الحسینی رحمه الله
    44 = تذکرة المفسرین . مولانا قاضی محمد زاهد الحسینی رحمه الله
    45 = علوم القرآن . علامه شمس الحق أفغاني رحمه الله
    46 = أحکام القرآن . علامه شمس الحق أفغاني رحمه الله
    47 = مفردات القرآن .علامه شمس الحق أفغاني رحمه الله
    48 = مشکلات القرآن .علامه شمس الحق أفغاني رحمه الله
    49 = شرح تفسیر البیضاوی . علامه محمد إدریس کاندهلوی رحمه الله
    50 = ذخیرة الجنان فی فهم القرآن . علامه سرفراز خان صفدر رحمه الله
    51 = أحسن البیان فیما یتعلق باالقرآن . علامه أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمه الله
    52 = مِـرآة التفسیر . علامه أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمه الله
    53 = مقدمة تفسیر البیضاوی . علامه أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمه الله
    54 = حاشیة تفسیر جلالین .عربی میں ، مولانا احتشام الحق کاندهلوی رحمه الله
    55 = لغات القرآن . علامه عبدالرشيد نعماني رحمه الله
    56 = أنوار القرآن . علامه محمد نعيم ديوبندي رحمه الله
    57 = روح القرآن . شيخ الإسلام شبير أحمد عثماني ديوبندي رحمه الله
    58 = اردو ترجمہ تفسير ابن عباس . علامه عبدالرحمن كاندهلوي رحمه الله
    59 = تدوين القرآن . علامه مناظر حسن گيلاني رحمه الله
    60 = تفسير القرآن . علامه شائق أحمد عثماني رحمه الله
    61 = فيض الرحمن . علامه يعقوب الرحمن عثماني رحمه الله
    62 = مفتاح القرآن . علامه شبير أزهر مِيرٹهي رحمه الله
    63 = جواهر التفاسير . علامه عبدالحكيم لكهنوي رحمه الله
    64 = درس القرآن . علامه أخلاق أحمد ديوبندي رحمه الله
    65 = غاية البرهان في تاويل القرآن . علامہ سيد حكيم حسن رحمه الله
    66 = علوم القرآن . علامہ عبيد الله قاسمي رحمه الله
    67 = فهم القرآن . علامہ سعيد أحمد قاسمي رحمه الله
    68 = ألروض النضير شرح الفوز الكبير . علامہ حنيف گنگوهي رحمه الله
    69 = ألفوز العظيم شرح الفوز الكبير . علامہ خورشيد أنور فيض آبادي رحمه الله
    70 = معالم التنزيل . علامہ محمد على صديقى كاندهلوي رحمه الله
    71 = مرشد الحيران إلى فهم القرآن . علامہ محمد طاهر رحمه الله
    72 = ألعرفان في أصول القرآن . علامہ محمد طاهر رحمه الله
    73 = ألبرهان في أصول القرآن . علامہ محمد طاهر رحمه الله
    74 = نيل السائرين في طبقات المفسرين . علامہ محمد طاهر رحمه الله
    75 = سمط الدرَر في ربط الآيات والسور . علامہ محمد طاهر رحمه الله
    76 = مقدمة تفسیر القرآن . علامہ محمد سالم دیوبندی رحمه الله
    77 = أحكام القرآن . علامہ عبدالعزيز هزاروي رحمه الله
    78 = تفريح الجنان في تفسير أم القرآن . علامہ عبدالقادر جامي هزاروي رحمه الله
    79 = عمدة الفكر في تفسير سورة العصر. علامہ عبدالقادر جامي هزاروي رحمه الله
    80 = تفسير جواهر القرآن . علامہ غلام الله خان رحمه الله
    81 = اردو ترجمہ تفسير ابن كثير . علامہ أنظر شاه الكشميري رحمه الله
    82 = ألبيان في علوم القرآن . علامہ ممتاز علي ديوبندي رحمه الله
    83 = تفسير القرآن . علامہ حبيب أحمد كِـيرانوي رحمه الله
    84 = تفصيل البيان في علوم القرآن . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    85 = دلائل القرآن على مسائل النعمان . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    86 = أحسن الأثاث في النظر الثاني في التفسير المقامات الثلاث . حكيم الأمة أشرف علي التهانوي رحمه الله
    87 = آداب القرآن . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    88 = شاه عبدالقادر کی ترجمہ قرآن پر حاشیہ . علامہ أحمد علي لاهوري رحمه الله
    89 = آيات محكمات . علامہ الحكيم علاء الدين الصديقي رحمه الله ، تلميذ حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    90 = تفسير الحاوي على البيضاوي . علامہ جميل أحمد رحمه الله

    قرآن کریم سے متعلقہ علماء دیوبند کی تالیفات وتصنیفات کا احاطہ بہت ہی دشوار ہے ، بطور نمونہ چند کا تذکره کر دیا تاکہ علماء دیوبند کی خدمت قرآن کا قدرے اندازه ہو جائے ، قرآن کریم سے متعلق علماء دیوبند کی بے پناه علمی وتبلیغی وتدریسی وتصنیفی خدمات کی تفصیل مجھ جیسے طالب علم کے بس کی بات نہیں ہے ، یہ جلیل القدر تالیفات ہیں جس کے ذریعے امت کو نفع کثیر پہنچا ہے ، اور ان شاء الله قیامت تک پہنچتا رہے گا
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-02-2013 at 08:30 AM.

  2. The Following User Says Thank You to Hafiz M Khan For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  3. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور علوم حدیث

    علوم حدیث میں بهی علماء دیوبند کی بہت سی تالیفات وتصنیفات ہیں ، جن کا احاطہ کرنا مشکل ہے ، اور راقم الحروف کی بس سے خارج ہے ، یہاں اس باب میں صرف مشہور کتب کی مختصر تعداد ذکرکرتا ہوں

    1 = اِعلاء ُ السُّنَن . 22 جلدوں میں ، رأس المحدثين وعمدة المحققين مولانا ظفراحمد عثمانی رحمـه الله

    یہ عظیم علمی خدمت حضرت حكيم الأمة رحمه الله نے شروع فرمائی ، اور پهر حضرت حكيم الأمة رحمه الله کے حکم سے اورآپ ہی کی زیرنگرانی مولانا ظفراحمد عثمانی رحمـه الله نے 20 بیس سال کے طویل عرصہ میں اس عظیم الشان وفقید المثال علمی وتحقیقی کارنامے کی تکمیل فرمائی ، اس عظیم کتاب میں ائمہ احناف کے تمام دلائل کو انتہائی تفصیل اور احادیث وآثار کی تخریج وتحقیق کے ساتھ بیان کیا گیا ہے ، یہ عظیم کتاب علم حدیث کا ایک نایاب خزانہ ہے ، ائمہ احناف کے تمام دلائل کو جس تفصیل وتحقیق سے اس کتاب میں جمع کیا گیا ہے تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی ، اور اس عظیم علمی کارنامے کا اصل سبب یہ ہوا کہ ہندوستان میں جب نام نہاد اهل حدیث فرقہ مذہب احناف کی مخالفت کے لیئے پیدا کیا گیا ، تو اس نومولود فرقہ نے رات دن ایک کرکے مذہب احناف کے خلاف کام شروع کیا ، اور بڑے زور وشور سے یہ تبلیغ شروع کردی کہ حنفی مذہب قرآن وسنت کے خلاف ہے ، اور رائے وقیاس کے اوپر مبنی ہے ، لهذا ان لوگوں کے اس کذب وفریب کا پرده چاک کرنے کے لیے ( اعلاءُ السنن ) جیسا عظیم علمی کارنامہ سرانجام دیا گیا ، اعلاءُ السُنَن فقهی ابواب پر مشتمل ہے ( کتاب ُ الطهارت سے لے کتاب ُ الفرائض تک) احناف کے تمام مسائل واقوال کو انتہائی تفصیلی دلائل سے ثابت کیا گیا ہے ، یہ عظیم کتاب پڑہنے کے بعد ایک منصف شخص چاہے حنفی ہو یا غیر حنفی صاحب کتاب کی علوم وفنون میں تبحر کا اقرار کرے گا ، حتی کہ بعض عرب علماء نے تو یہاں تک تصریح کردی کہ ( اعلاءُ السنن ) کا مصنف محض ایک عالم ہی نہیں بلکہ مجتہد ہے ، یہ عظیم کتاب پڑہنے کے بعد ایک منصف شخص چاہے حنفی ہو یا غیر حنفی یہ کہنے پر بهی مجبور ہوجاتا ہے کہ واقعی مذهب احناف تمام مسائل میں دلائل کے اعتبار سے سب سے قوی ترین مذہب ہے ، لیکن ایک جاہل ومعاند وحاسد شخص اگر اس کے بعد بهی انکار اور زبان درازی کرے تو اس کا علاج تو کسی کے پاس نہیں ہے ، لهذا اِس عظیم کتاب کے منظرعام پر آنے کے بعد مذہب احناف پر اعتراض کرنے والوں کی زبانیں گنگ ہو گئیں ، اور ان شاء الله قیامت تک کوئی صاحب علم اور منصف شخص دلائل کی روشنی مذہب احناف کو قرآن وسنت کے خلاف نہیں کہ سکے گا ، باقی چند جاہل واحمق لوگ اگر فقہ حنفی کے خلاف بکواس کریں تو اہل علم کے نزدیک ان کی کوئی حیثیت نہیں ہے ، کتاب کا پہلا ضخیم جلد جو سینکڑوں صفحات پر مشتمل ہے ، اس میں علم اصول حدیث کے تمام قواعد وضوابط وتعریفات واصطلاحات کو انتہائی تفصیل سے بیان کیا گیا ہے ، کتاب پورے کتاب میں جابجا انتہائی نادر علمی موتی ہوئے بکھرے نظر آتے ہیں ، اسی عظیم کتاب کو دیکهنے کے بعد مصر کے ایک مشہور عالم ومفتی اعظم علامہ زاہد کوثری نے اپنی کتاب میں یہ مبنی بر حقیقت تبصره لکھا کہ
    در اصل یہ کام ایک جماعت کے کرنے کا تھا جو تنہا فردِ واحد نے انجام دیا ہے اورامت پر یہ ایک ہزار سال سے قر ض تھا جو تنہا اس شخص نے ادا کردیا
    فجزى الله مؤلفه الإمام خير الجزاء وتغمده الله بغفرانه ورحمته ورضوانه وأسكنه فسيح جنانه ونفعنا بعلومه أللهم آمين بحرمة سيد المرسلين
    2 = حاشيه صحيح البخارى . عربی میں ، علامہ احمد علی سہارنپوری رحمـه الله موصوف کا یہ حاشیہ ایک ضخیم شرح کا حکم رکهتا ہے
    3 = تعليق وحاشيه سنن الترمذي . عربی میں ، علامہ أحمد علي سهارنپوري رحمه الله
    4 = تعليق وحاشيه مشكاة شریف . عربی میں ، علامہ أحمد علي سهارنپوري رحمه الله
    5= بذل المجهود فی شرح سنن أبي داود . عربی میں ، علامہ خليل أحمد سهارنپوري ثم المهاجر المدني رحمه الله تعالى ، سنن أبي داود کی یہ عظیم الشان علمی شرح پانچ ضخیم جلدوں میں ہے ، اور مصر سے بیس جلدوں میں شائع ہوئی ہے
    6 = فتحُ الملهم فی شـرح مسلم . عربی میں ، شیخ الاسلام شبیر احمد عثمانی رحمه الله ، یہ صحیح مسلم کی انتہائی عظيم ضخيم شرح ہے
    7 = فیض الباری بشرح صحیح البخاری . عربی میں ، إمام العصر المحدث العظيم محمد أنور شاه كشميري رحمه الله ، حضرت کشمیری کے شاگرد رشید محدث کبیر علامہ بدر عالم ميرٹهي رحمه الله نے اس کو مرتب کیا ہے ، علمی فوائد ونکات سے بهرپور شرح ہے
    8 = ألعـرفُ الشذي علی جامع الترمذي . عربی میں ، إمام العصر المحدث العظيم محمد أنور شاه كشميري رحمه الله ، حضرت کشمیری کے شاگرد رشید علامہ محمد چراغ رحمه الله اس کو ترتیب دیا ہے
    9 = ألکوکَبُ الدُّري علی جامع الترمذي . عربی میں ، مولانا رشيد احمد گنگوہی رحمه الله
    10 = ألنفعُ الشذي شرح الترمذي . اردو میں ، امام رباني علامہ رشيد أحمد گنگوہی رحمه الله
    11 = شرح سنن أبی داود . عربی میں ، إمام العصر المحدث العظيم محمد أنور شاه كشميري رحمه الله
    ۱۲ = حاشیة سنن ابن ماجة . عربی میں ، إمام العصر المحدث العظيم محمد أنور شاه كشميري رحمه الله
    13 = أوجَزُ المَسالِك في شرح مؤطا إمام مالك . عربی میں ، علامہ محمد زکریا کاندهلوي ثم المهاجر المدني رحمه الله ، یہ موطأ إمام مالك کی عظیم الشان بے مثال شرح ہے
    14 = ألتعلِیقُ الصَّبیح علی مشکاة المصابیح . عربی میں ، علامہ محمد إدريس كاندہلوي رحمه الله
    15 = الآثار . عربی میں ، حكيم الأمة اشرف علي تهانوي رحمه الله
    16 = شرح شمائل الترمذي . شیخ الحدیث محمد زکریا کاندهلوي ثم المهاجر المدني رحمـه الله
    17 = ألنبراس الساري في أطراف البخاري . عربی میں ، مولانا عبدالعزیز پنجابی رحمـه الله ، مِقیاس ُ الواری کے نام سے اس پرعلامہ موصوف کا حاشیہ بهی ہے
    18 = التعلیق المحمود علی سنن ابی داود . مولانا فخرالحسن گنگوہی تلميذ امام رباني رشيد أحمد گنگوہی رحمهما الله ، یہ عربی میں انتہائی ضخیم حاشیہ ہے
    19 = حاشیة على الترمذي . عربی میں ، شيخ الهند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله
    20 = شرح تراجم البخاري . شيخ الهند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله
    21 = ألطیبُ الشذِی شرح الترمذي . عربی میں ، علامہ أشفاق الرحمن کاندهلوي رحمـه الله
    22 = بُغية الألمعي في تخريج الزيلعي . عربی میں ، یہ مشہور حنفی عالم علامہ زيلعي رحمه الله کی کتاب (نصب الراية لأحاديث الهداية ) پر انتہائی عظیم علمی حاشیہ ہے ، جس کا مقدمہ محدث العصر علامہ محمد يوسف بَنـُوري رحمه الله نے لکها ، اور كتاب الحج تک تصحیح وحاشیہ علامہ عبد العزيز پنجابي رحمه الله نے لکها ، اور پهر اس کی تکمیل علامہ محمد يوسف كاملپوري رحمه الله نے فرمائی
    نوٹ = آج کل کامل پور کا نام اٹک ہے
    23 = مَعـارفُ السنن شـرح الترمذي . عربی میں ، محدث العصر علامہ محمد يوسف بَنـُوري رحمه الله ، یہ ایک عظیم ومفصل شرح ہے ، اور بے شمار علمی مباحث وفوائد سے بهرپور ہے
    24 = لامع الدراري على جامع البخاري . عربی میں ، امام رباني علامہ رشيد أحمد گنگوہي رحمه الله کی دروس بخاری کا مجموعہ ہے ، جس کو شیخ الحدیث محمد زکریا کاندهلوي ثم المهاجر المدني رحمـه الله نے اپنی تعلیق وتحقیق کے ساتھ مرتب کیا ہے ، اور اس کے شروع میں ایک عظیم الشان اور علمی فوائد ونکات سے بهرپور اور مفصل مقدمہ بهی ہے
    25 = شرح تراجم البخاري . عربی میں ، علامه محمد إدريس كاندہلوي رحمه الله
    26 = شرح کتـاب الآثـار . عربی میں ، علامہ مفتی مهدی حسن ديوبندي رحمه الله ، تین ضخیم جلدوں میں ایک وقیع شرح ہے
    27 = شرح الترمذي . عربی میں ، علامہ شمس الحق أفغاني رحمـه الله
    28 = أمـاني الأحبـار في شرح معاني الآثـار . عربی میں ، علامہ محمد يوسف كاندہلوي ابن الشيخ مولانا محمد إلياس كاندہلوي رحمهما الله تعالى ، چار ضخیم جلدوں میں ایک عظیم شرح ہے
    29 = حاشیة سنن إبن ماجة . عربی میں ، علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    30 = حاشية مؤطا إمام مالك . عربی میں ، علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    31 = حمد المتعالي علی تـراجم صحیح البخاري . علامہ سید بادشاه گل ، تلميذ علامہ سيد حسين أحمد مدني رحمهما الله
    32 = شرح الترمذي . علامہ سید بادشاه گل رحمـه الله
    33 = ألکلام الحاوي علی الطحاوي . علامہ سرفراز خان صفدر رحمـه الله
    34 = حاشیة مشکاة المصابيح . عربی میں ، علامہ نصیر الدین کامِل پـُوری رحمـه الله
    35 = شرح الترمذي . علامہ موسی خان روحاني البازي رحمـه الله
    36 = شرح المِشکاة . علامہ موسی خان روحاني البازي رحمـه الله
    37 = فضل الباري فی فـقـه البخاري . علامہ عبدالرءوف ہزاروي تلمیذ الإمام الکشمیري رحمـهما الله
    39 = حاشیة سنن أبي داود . عربی میں ، علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    40 = علم الحدیث . علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    41 = مِصباحُ الطحاوي . علامہ أسعد الله مظاهـري رحمـه الله
    42 = منحة الحدیث فی شرح ألفیة الحدیث .علامہ محمد إدریس كاندہلوي رحمـه الله
    43 = مقدمة الحدیث . علامہ محمد إدریس كاندہلوي رحمـه الله
    44 = تراجم الأحبار من رجال معاني الآثار . علامہ حکیم سید محمد أیوب سهارنپـوری رحمـه الله
    45 = حاشیة على الطحاوي . علامہ حکیم سید محمد أیوب سهارنپـوری رحمـه الله
    46 = شرح شمائل الترمذي .علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    47 = ترجمان السنة . اردو میں ، علامہ سید بدرعالم ميرٹهي رحمـه الله
    48 = معارف الحدیث . اردو میں ، علامہ منظور أحمد نعماني رحمـه الله
    49 = خزائن السنن شرح الترمذي . علامہ سرفراز خان صفدر رحمـه الله
    50 = تقریرات علی صحیح البخاري . علامہ فخرالدین أمروہی رحمـه الله
    51 = فضل الباری شرح البخاري . اردو میں ، شیخ الإسلام شبیر أحمد عثمانی رحمـه الله
    52 = الحاوي على مشكلات الطحاوي . اردو میں ، علامہ عبد الرحمن كامل پـُوري رحمه الله
    53 = تحفة القاري بحل مشكلات البخاري . علامہ محمد إدريس کاندهلوي رحمـه الله
    54 = شرح مقدمة صحيح الإمام البخاري . علامہ محمد إدريس کاندهلوي رحمـه الله
    55 = تدوين الحديث . علامہ مناظر أحسن گيلاني رحمه الله
    56 = مظاهر الحق شرح المشكوة . علامہ عبدالله جاويد رحمه الله
    57 = معين اللبيب على ألفية الحديث . علامہ توقير عالم رحمه الله
    58 = كشف المغطى عن رجال المؤطا . علامہ أشفاق الرحمن كاندهلوي رحمـه الله
    59 = معارف الترمذي . اردو میں ، علامہ عبد الرحمن كامل پـُوري رحمه الله
    60 = الباقيات شرح إنما الأعمال بالنيات . علامہ محمد إدريس کاندهلوي رحمـه الله
    61 = تحفة الإخوان بشرح حديث شعب الإيمان .علامہ محمد إدريس کاندهلوي رحمـه الله
    62 = الأبواب والتراجم . علامہ محمد إدريس کاندهلوي رحمـه الله
    63 = جواهر الأصول في أصول الحديث . علامہ عبدالرحمن مَرداني رحمه الله
    64 = حجية الحديث . علامہ قاری محمد طيب قاسمي رحمه الله
    65 = درَر الفرائد ترجمة جمع الفوائد . علامہ عاشق إلهي ميرٹهي رحمه الله
    66 = معارف السنة . علامہ إحتشام الحق كاندهلوي رحمه الله
    67 = مجاني الأثمار من شرح معاني الآثار . علامہ عاشق إلهي المدني رحمه الله
    68 = تقرير على سنن الترمذي . شيخ الهند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله
    69 = فلاح وبهبود ترجمة سنن ابوداود . علامہ محمد حنيف گنگوهي رحمه الله
    70 = تعليقات على سنن أبي داود . شيخ الهند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله
    71 = أنوار المحمود في شرح سنن أبي داود . إمام العصر محمد أنور شاه الكشميري رحمه الله
    72 = ترجمة صحيح مسلم . علامہ عابدالرحمن صديقي ابن العلامة إشفاق الرحمن كاندهلوي رحمهما الله
    73 = تجريد صحيح مسلم ترجمة صحيح مسلم . علامہ محمد مالك كاندهلوي ابن العلامة محمد إدريس كاندهلوي رحمهما الله
    74 = أنوار الباري في شرح صحيح البخاري . علامہ أحمد رضا بجنوري رحمه الله
    75 = فضل الباري شرح صحيح البخاري . علامہ شبير أحمد عثماني رحمه الله
    76 = إيضاح الباري شرح صحيح البخاري . علامہ فخر الدين مراد آبادي رحمه الله
    77 = إرشاد الساري شرح صحيح البخاري . علامہ مفتي رشيد أحمد لدهيانوي رحمه الله
    78 = جواهر البخاري على أطراف البخاري . علامہ قاضي زاهد الحسيني رحمه الله
    79 = تنقيح الشذى على جامع الترمذي . علامہ شمس الحق الأفغاني رحمه الله
    80 = ترجمة جامع الترمذي . علامہ حامد الرحمن صديقي ابن الشيخ إشفاق الرحمن كاندهلوي رحمهما الله
    81 = ترجمة سنن النسائي . علامہ حبيب الرحمن صديقي ابن الشيخ إشفاق الرحمن كاندهلوي رحمه الله
    82 = ترجمة سنن ابن ماجة . علامہ حبيب الرحمن صديقي ابن الشيخ إشفاق الرحمن كاندهلوي رحمهما الله
    83 = إنعام الباري في شرح أشعار البخاري . علامہ عاشق إلهي المهاجر المدني رحمه الله
    84 = الفوائد السنية في شرح الأربعين النووية . علامہ عاشق إلهي المهاجر المدني رحمه الله
    85 = زاد الطالبين من كلام رسول رب العالمين .علامہ عاشق إلهي المهاجر المدني رحمه الله
    86 = لب اللباب في تخريج ما يقول الترمذي وفي الباب .علامہ محمد يوسف بَنـُوري رحمه الله
    87 = المطالب العالية بزوائد المسانيد الثمانية . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    88 = المسند للحميدي . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    89 = الزهد والرقائق عبد الله بن المبارك . تحقیق وتعلیق وتصحیح ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    90 = المصنف للإمام عبد الرزاق . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    91 = سنن سعيد بن منصور . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    92 = انتقاء الترغيب والترهيب . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    93 = تلخيص خواتم جامع الأصول . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    94 = كشف الأستار من زوائد مسند البزار للهيثمي . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    95 = كتاب الثقات لابن شاهين . تحقیق وتعلیق ، علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    96 = الحاوي لرجال الطحاوي . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    97 = الأزهار المربوعة في رد الآثار المتبوعة . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    98 = الاتحافات السنية بذكرى محدِّثي الحنفية . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    99 = تسهيل الباري في حل صحيح البخاري . علامہ صديق أحمد باندوي رحمه الله
    100 = تعليقات على سنن أبي داود . شیخ الہند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله

    یہ ان اکابر کا علوم حدیث میں علمی مآثر کا مختصر وسرسری جائزه تها ، اور جن کتابوں کا تذکره ره گیا وه بهی بهت زیاده ہیں ، اور پهر علم حدیث کے ان کتب پر ان علمی وتحقیقی رسائل کا بهی مزید اضافہ کر لیا جائے جو حدیث کے نادر ابحاث سے مزین ہیں ، مثلا
    ایضاح الأدلة ، أوثق العری ، أحسن القری ، القطوف الدانية ، اسراء النجیح ، المصابیح ، فصل الخطاب ، کشف الستر ، نیل الفرقدین ، الخ
    اس کے علاوه بے شمار رسائل احادیث کے مختلف موضوعات پر ان اکابر نے تالیف کیئے ہیں ، جن کے صرف نام جمع کرنے کے لیئے بهی ایک مستقل کتاب درکار ہے ، درحقیقت حدیث وعلوم حدیث سے متعلق ان اکابر کی تمام تصنیفات کا صرف تذکره بهی راقم الحروف کی بس سے خارج ہے
    فجزاهم الله تعالی احسن الجزاء واکمل الجزاء فی الدارین وکثرالله سوادهم الی یوم الدین
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-05-2013 at 10:17 AM.

  4. The Following User Says Thank You to Hafiz M Khan For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  5. Join Date
    Aug 2008
    Posts
    3,301
    Thanks
    575
    Thanked 220 Times in 160 Posts

    JAZAKALLAH hafiz bahye and sajid bahye bahut he umda hsaring ke he ALLAh humin apne islaaf per chalne ki tofeeq ata farmye aru humare aslaf ki mahnet ko kabool farmaye ameen

  6. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور علم فقہ وعلم أصول فقہ وعلم فتاوی


    علم فقہ واصول فقہ وفتاوی کے باب میں بهی علماء دیوبند کی خدمات وتصنیفات بے شمار ہیں ، ذیل میں بطور نمونہ صرف مشہور کتب کا تذکره کروں گا ، یاد رہے کہ سرزمین پاک وہند میں نوّے فیصد مسلمان فقہ حنفی کے مقلد ہیں ، اور فقہ حنفی امام اعظم ابوحنیفہ رحمه الله کے اجتهاد اور ان کے تلامذه کے استخراجات اور پهر اصحاب ترجیح کے فیصلوں کے مجموعہ کا نام ہے ، ظاہر ہے بڑی چهان بین اور کانٹ چهانٹ اور بحث و تحقیق کے بعد فقہ کا کوئی مسئلہ اصول شریعت کے خلاف باقی نہیں ره سکتا ، مگر اس طریق عمل میں ایک اور پہلو بهی تها ، وه یہ کہ عمل کرنے والے کی نظر فقهاء وائمہ کی تخریجات وتحقیقات تک محدود رہتی ، اور گو وه اعمال حضور صلی الله کی سنت اور صحابہ کرام کے طریق سے ثابت تهے ، لیکن عمل کرنے والوں کا شعور اتباع سنت کی لذت پوری طرح محسوس نہیں کرتا تها ، علماء دیوبند نے اعمال وعبادات کو ان کے مصادر و مراجع کی طرف لوٹایا ، احادیث کے دفاتر کهولے ، رجال کی نئے سرے سے جانچ پڑتال کی ، مطالب ومعانی میں ابحاث وتحقیقات کیں ، اور گو ان اکابر کو فقہ حنفی کا کوئی مُفتی بہ مسئلہ اصول شریعت کے خلاف نہیں ملا ، تاہم اس راه تحقیق نے ایسی فضا پیدا کی کہ پہلے جن مسائل پر فقہ سمجهہ کر عمل کیا جاتا تها ، اب وہی نور سنت کی کامل روشنی دینے لگے ، اور اب ان اعمال وعبادات میں اتباع سنت کی لذت وروشنی کامل طور پر محسوس ہونے لگی ، علماء دیوبند نے اپنی گراں قدر علمی تحقیقات کے ذریعے نہ صرف پاک وہند کے احناف کو سنت کا کامل شعور بخشا ، بلکہ ان کی حدیثی و فقہی تحقیقات نے پورے عالم میں ان کے علوم ومعارف کو پهیلا دیا ، امام محمد رحمه الله امام اعظم رحمه الله کی وفات کے بعد مدینہ تشریف لے گئے اور امام مالک رحمه الله کے حلقہ درس میں شا مل ہو گئے ، امام محمد رحمه الله نے امام اعظم رحمه الله اور امام مالک رحمه الله کے ذوق اجتهاد کا تقابلی مطالعہ کیا ، تو امام اعظم ابو حنیفہ رحمه الله کے اجتهادات کو اصول سنت کے زیاده قریب پایا ،پهرامام محمد رحمه الله نے ان احساسات کی بنا پر ( ألحُجـة على أهل المدينة ) کے نام سے ایک کتاب لکهی ، اس کتاب کا ایک نسخہ مدینہ منوره کے مکتبہ محمودیہ میں اور ایک نسخہ ترکی کے مکتبہ نورعثمانیہ میں تها ، علماء وفضلاء دور دراز صرف اس کتاب کو دیکهنے کے لیئے آتے تهے

    1 = الحجة على أهل المدينة . للامام محمد بن الحسن بن فرقد الشيباني رحمه الله ، شیخ الهند رحمه الله کے شاگرد رشید مولانا مفتی سید مهدی حسن رحمه الله نے اس کتاب پر تحقیقاتی کام کیا ، اور 20 سال میں اس کے مسودے کی تصحیح وتعلیق مکمل فرمائی ، پوری کتاب چار جلدوں میں ہے ، علماء دیوبند کا یہ ایک عظیم علمی وتاریخی کارنامہ ہے
    2 = كتاب الأصل المعروف بالمبسوط . للإمام محمد بن الحسن الشيباني رحمه الله ، امام محمد رحمه الله کی یہ کتاب جو ظاهرالروایة میں كتاب الأصل کی حیثیت رکهتی ہے ، اوراس کو اس نام سے بهی موسوم کیا جاتا ہے ، یہ استامبول کے مکتبہ فیض الله میں 6 جلدوں میں موجود تهی ، دیوبند کے مقتدر ومستند عالم علامہ ابوالوفاء افغانی رحمه الله نے اس پرتحقیقاتی کام کیا اور تعلیق لکهی ، اور اس طرح یہ کتاب دیوبند کے فیض سے منصہ شہود پرآگئ ، اوربڑی آب وتاب کے ساتھ شائع ہو گئ ، جس کو دیکهنے کے لیئے ایک ہزار سال سے علماء وطلباء خواہش کر رہے تهے
    3 = السير الكبير . امام محمد رحمه الله کی یہ کتاب بهی امام سَرَخسِی کی شرح کے ساتھ چار جلدوں میں علماء دیوبند کی کاوشوں سے شائع ہوئی
    4 = بُغيةُ الألمعي في تخريج الزيلعي . امام برهان الدين علي بن أبي بكر المرغيناني الحنفي رحمه الله کی کتاب (الهداية) فقہ حنفي کی مستند ومعتمد کتب میں سے ہے ، روز اول سے لے آج تک اس کتاب کو قبول عام حاصل ہے ، بڑے بڑے علماء نے اس کتاب پر بے شمار شروحات وحواشی لکهے ، آٹهویں صدی میں حنفي مسلک کے ایک بڑے امام علامہ حافظ جمال الدین زَیلعی رحمه الله نے " نصبُ الراية " کے نام سے کتاب (الهداية) میں موجود تمام احاديث وآثار کی چاہے وه مذہب حنفي کی دلیل ہوں یا دیگر تین مذاہب کی سب کی تخریج فرمائی ، اوراپنی اس کتاب میں علم حدیث کا ایک بڑا ذخیره جمع فرمایا ، لیکن یہ عظیم علمی سرمایہ سالہا سال سے نایاب تها ، علماء دیوبند نے نہ صرف اس کو دوباره طبع کرایا بلکہ اس پر " بُغيةُ الألمَعي في تخريج الزيلعي " کے نام سے ایک جلیل القدر علمی وتحقیقی حاشیہ تحریر فرما کر علماء حدیث وفقہاء اسلام پر ایک بڑا احسان فرمایا ، یہ کتاب 4 جلدوں میں مصر سے بڑی آب وتاب کے ساتھ شائع ہوئی ، علماء دیوبند کا یہ منفرد کارنامہ بالخصوص فقہ حنفی اور بالعموم علم حدیث کی ایک عظیم الشان خدمت ہے
    5 = حاشية محمود الرواية على شرح النقاية . علامہ ملا علي قاري الهروي الحنفي رحمه الله کی کتاب ( فتح باب العناية بشرح النقاية ) فقہ وحدیث کا ایک عظیم سرمایہ ہے ، مگر زیور طباعت سے آراستہ نہ تهی ، دیوبند کے شیخ الادب والفقہ مولانا اعزازعلی رحمه الله نے ( محمودالروایة ) کے نام سے اس پر ایک عظیم حاشیہ لکھ کر بڑے اہتمام سے شائع کیا ، اور یہ حاشیہ شام کے شہر "حلب " سے مکمل کتاب کی صورت میں شائع ہوا
    6 = حاشية كنز الدقائق . شیخ الادب والفقہ مولانا اعزاز علی ديوبندي رحمه الله نے فقہ حنفی کی معتبرکتاب (کنزالدقائق) پر عربی حاشیہ تحریر کیا
    7 = حاشية القدوري . شیخ الادب والفقہ مولانا اعزاز علی ديوبندي رحمه الله نے فقہ حنفی کی مشہور ومستند کتاب (مختصر قُدوری) پر بہترین عربی حاشیہ لکها
    8 = حاشية نور الإيضاح . شیخ الادب والفقہ مولانا اعزاز علی ديوبندي رحمه الله نےفقہ حنفی کی مشہور ابتدائی کتاب (نُورُالإيضاح) پر بهی حاشیہ لکها ، جو بہت مقبول ہوا ، اور کئ دفعہ طبع ہوا
    9 = حاشية على نور الإيضاح . شیخ الادب والفقہ مولانا اعزاز علی ديوبندي رحمه الله نے فقہ حنفی کی اس کتاب پر فارسی میں بهی حاشیہ لکها
    10 = ألمستزاد الحقیر شرح زاد الفقير . علامہ ابن همام رحمه الله کی کتاب (زادُ الفقیر) پر مولانا بدرعالَم میرٹهی رحمه الله نے (ألمُستزاد الحقیر) کے نام سے عربی میں مفید علمی حاشیہ لکها
    11 = جواهر الفقه . مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله
    12 = الحيلة الناجزة للحليلة العاجزة . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    13 = سبيل الرشاد . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    14 = أوثق العرى . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    15 = زبدة المناسك . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    16 = ألرأي النجيح . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    17 = هداية المعتدي . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    18 = المقالات الفقهية . مفتي محمد رفيع عثماني حفظه الله وأدام ظله
    19 = أصول الافتاء . مفتي محمد تقي عثماني حفظه الله وأدام ظله
    20 = ترجيح الراجح بالرواية في مسائل الهداية . مفتي غلام قادر نعماني رحمه الله
    21 = شرح عقود رسم المفتي . مفتي محمد رفيع عثماني حفظه الله
    22 = ضابط المفطرات في مجال التداوي . مفتي محمد رفيع عثماني حفظه الله
    23 = السقاية شرح الهداية . علامہ عثمان غني مونگيري رحمه الله
    24 = الصبح النوري شرح القدوري . علامہ محمد حنيف گنگوهي رحمه الله
    25 = أشرف الهداية شرح الهداية . علامہ جميل أحمد سكروڈي رحمه الله
    26 = قوت الأخيار في شرح نورالأنوار . علامہ جميل أحمد سكروڈي رحمه الله
    27 = فيض السبحاني شرح الحسامي . علامہ جميل أحمد سكروڈي رحمه الله
    28 = أجمل الحواشي شرح أصول الشاشي . علامہ جميل أحمد سكروڈي رحمه الله
    29 = إيضاح الحسامي . علامہ جمال أحمد ميرٹهي رحمه الله
    30 = تدوين الفقه . علامہ مفتي ظفير الدين رحمه الله
    31 = غاية السعاية شرح الهداية . علامہ محمد حنيف گنگوهي رحمه الله
    32 = الجامع الكبير . تحقیق وتعلیق ، علامہ أبوالوفاء الأفغاني رحمه الله
    33 = النكت شرح الزيادات لشمس الأئمة السرخسي . تحقیق وتعلیق ، علامہ أبوالوفاء الأفغاني رحمه الله
    34 = معين القضاة والمفتين . علامہ شمس الحق الأفغاني رحمه الله
    35 = غنية الناسك في بغية المناسك . علامہ محمد حسن شاه المهاجر المكي رحمه الله ، تلميذ علامہ رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله ، یہ کتاب علامہ خليل أحمد سهارنپوري رحمه الله کی محنت سے پہلی دفعہ شائع ہوئی تهی
    36 = التسهيل الضروري لمسائل القدوري . علامہ محمد عاشق الهي البرني
    المهاجر المدني رحمه الله
    37 = مختصر الطحاوي . تحقیق وتعلیق ، علامہ أبوالوفاء الأفغاني رحمه الله
    38 = ألقول القريب في إجابة الأذان بين يدي الخطيب . دار الإفتاء دارالعلوم ديوبند
    39 = تنقيح المقال في تصحيح الإستقبال . دار الإفتاء دارالعلوم ديوبند
    40 = مكبرالصوت وأحكامه الشرعية . دار الإفتاء دارالعلوم ديوبند
    41 = مفيد الوارثين . علامہ سيد أصغر حسين ديوبندي رحمه الله
    42 = ميراث المسلمين . علامہ سيد أصغر حسين ديوبندي رحمه الله
    43 = حاشية السراجي . علامہ رحمت الله سلہٹی رحمه الله
    44 = إيضاح المسائل . مفتي شبير أحمد قاسمي رحمه الله
    45 = إيضاح النوادر . مفتي شبير أحمد قاسمي رحمه الله
    46 = إيضاح المناسك . مفتي شبير أحمد قاسمي رحمه الله
    47 = إيضاح المسالك . مفتي شبير أحمد قاسمي رحمه الله
    48 = نورالإصباح شرح نورالإيضاح . علامہ سيد محمد مياں رحمه الله
    49 = أحكام لحوم الخيل . علامہ بدر الحسن قاسمي رحمه الله
    50 = تعليم الإسلام . مفتي الأعظم محمد كفاية الله الدهلوي رحمه الله
    51 = بهشتي زيور . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    52 = عمدة الفقه . علامہ سيد زوار حسين رحمه الله
    53 = جدید فقہی مسائل . علامہ خالد سیف الله رحمانی رحمه الله
    54 = عزیزالفتاوی . علماء دیوبند میں سے صرف ایک عالم مولانا الشیخ مفتی عزیزالرحمن دیوبندی رحمه الله نے مختلف سوالات کے جوابات میں پچاس ہزار فتاوی صادر فرمائے جو عزیزالفتاوی کے نام سےشائع ہیں
    55 = فتاوى دارالعلوم ديوبند . محمد شفيع ديوبندي رحمه الله ، دس ضخیم جلدوں میں مستند فتاوی ہیں
    56 = إمداد الفتاوى . إمداد الفتاوى . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله ، حكيم الأمة رحمه الله کے یہ فتاوی ( إمداد المفتيين ) کے نام سے آٹھ ضخیم جلدوں میں مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله کی ترتیب وتحقیق سےشائع ہیں
    57 = أحسن الفتاوى . علامہ مفتي رشيد أحمد لدهيانوي رحمه الله
    58 = فتاوى رحيمية . علامہ مفتي عبد الرحيم لاجپوري رحمه الله
    59 = فتاوى رشيدية . امام رباني رشيد أحمد گنگوہي رحمه الله
    60 = خیر الفتاویٰ . جامعہ خیر المدارس ملتان ، مرتبہ مولانا مفتی محمد انور
    61 = فتاوى مظاهر العلوم المعروف بـ الفتاوى الخليلية . علامہ خلیل أحمد سهارنپوري رحمه الله
    62 = فتاوى عثماني . مفتي محمد تقي عثماني مد الله ظله العالي
    63 = فتاوى حقانية . جامعة دارالعلوم حقانية
    64 = فتاوى بينات . جامعة العلوم الإسلامية كراچی
    65 = فتاوى محمدي . علامہ سيد أصغر حسين ديوبندي رحمه الله
    66 = كفاية المفتي . مفتي اعظم ہند محمد كفاية الله دهلوي رحمه الله
    67 = فتاوى مفتي محمود . علامة مفتي محمود رحمه الله
    68 = فتاوى محمودیه . علامہ مفتي محمود الحسن گنگوهي رحمه الله
    69 = نظام الفتاوى . علامہ مفتي نظام الدين رحمه الله
    70 = آپ کے مسائل اور ان کا حل . حکیم العصر مولانا یوسف لدهیانوی شہید رحمه الله ، تمام مسائل ضروریہ پر مشتمل ایک مستند اور کامل وشامل مجموعہ ہے ، ہر عام وخاص مسلمان کے گهر میں اس کتاب کا ہونا بہت ضروری ہے

    یہ علماء دیوبند کا علم فقہ واصول فقہ وفتاوی کے باب میں علمی خدمات کا ایک مختصر سا جائزه تها ، پورا احاطہ اس میدان میں بهی راقم الحروف کے بس سے باہر ہے ، پهر خصوصا کتب فتاوی کے ضمن میں اکثر ایسے مقالات و رسائل بهی لکهے گئے ، جو مقالات ومضامین اپنی جگہ کافی تحقیقی اور اہل علم کے لیئے مفید ہیں ، اور ان مقالات کی جمع وترتیب ونشاندہی اپنی جگہ ایک محنت طلب کام ہے

    جزاهم الله تعالی واسکنهم فی الجنان الاعلی

    Last edited by Hafiz M Khan; 03-08-2013 at 12:18 PM.

  7. The Following User Says Thank You to Hafiz M Khan For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  8. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور علم الأدب

    علماء دیوبند نے علم ادب ولغت عربی میں بڑی عمده اور نافع کتابیں لکهی ہیں ، اس باب میں بهی علماء دیوبند کی تمام تصنیفات کا تذکره تو راقم الحروف کی بس میں نہیں ہے ، البتہ چند مشہور کتب کا ذکر درج ذیل ہے

    1 = شرح الحَمَّاسة المعروف بـ الفيضي . علامہ فیض الحسن سہارنپوری رحمه الله تلمیذ حضرت الإمام رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله ، یہ بہترین شرح (فيضي) کے نام سے مشہور ہے
    2 = تسهيل الدراسة في شرح ديوان الحماسة . عربی اردو ، مولانا ذوالفقار علي ديوبندي والد ماجد حضرت شیخ الہند مولانا محمود حسن دیوبندي رحمهما الله
    3 = ألتِبیان شرح دیوان المتنبي . علامہ ذوالفقار علي ديوبندي رحمه الله
    4 = عطر الورده شرح القصيدة البردة . علامہ ذوالفقار علي ديوبندي رحمه الله
    5 = ألتعلیقات علی سبع المُعلقات . علامہ ذوالفقار علي ديوبندي رحمه الله
    6 = ألإرشاد إلی بانت سعاد . علامہ ذوالفقار علي ديوبندي رحمه الله ، قصیده کعب بن زُہیر رضی الله عنہ کی عجیب شرح ہے
    نوٹ = مولانا ذوالفقار علی صاحب ایک جید ومستند عالم تھے ، بالخصوص ادب ولغت عربی میں ید طولی رکهتے تهے ، دیوبند کے اکابر ومشائخ میں سے تهے ، اور دارالعلوم دیوبند کی مجلس شوریٰ کے ممبر بھی تھے، لغت عربي میں آپ جیسے ماہر ومتبحر عالم کی مثال سرزمین ہند میں کم ہی ملتی ہیں
    7 = فتح المغلقات شرح المعلقات . علامہ نظام الدين كيرانوي رحمه الله
    8 = شرح الحماسة . شيخ الأدب علامہ إعزاز علي ديوبندي رحمه الله ، شيخ الأدب تمام علوم وفنون بالخصوص ادب وفقہ میں یکتائے روزگار تهے ، آپ کو اللہ تعالی نے بے شمار امتیازی صفات عطا کی تھی ، زندگی بھر تشنگان علم وعرفان میں وراثت نبوی تقسیم فرماتے رہے
    9 = شرح المتنبي . شيخ الأدب علامہ إعزاز علي ديوبندي رحمه الله
    10 = نفحة العرب . شيخ الأدب علامہ إعزاز علي ديوبندي رحمه الله
    نفحة العرب عربی ادب کی انتہائی بہترین کتاب ہے ، اور مدارس کے نصاب تعلیم میں شامل ہے
    11 = حاشية على مفيد الطالبين . شيخ الأدب إعزاز علي رحمه الله
    12 = البينات ترجمة لقصائد لامية المعجزات . شيخ الأدب علامہ إعزاز علي ديوبندي رحمه الله
    13 = درایة المُتیقظ علی کفایة المتحفظ . بعض فضلاء دیوبند
    14 = حاشية مختصر المعاني . شیخ الهند محمود الحسن ديوبندي رحمه الله
    15 = حاشية نفحة اليمن . مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله
    16 = التعلیقات شرح المقامات . علامہ نورالحق رحمه الله تلمیذ شیخ الهند رحمه الله
    17 = إظهار الطرب على شرح أزهار العرب . مفتي جميل أحمد تهانوي رحمه الله
    18 = القصائد العربية . مفتي جميل أحمد تهانوي رحمه الله
    19 = جميليات . مفتي جميل أحمد تهانوي رحمه الله
    20 = شرح ديوان المتنبي . علامہ محمد موسى خان روحاني البازي رحمه الله
    21 = خصائص اللغة العربية ومزاياها . علامہ محمد موسى خان روحاني البازي رحمه الله
    22 = رشحات القلم في الفروق . علامہ محمد موسى خان روحاني البازي رحمه الله
    23 = شرح ديوان حسان رضي الله عنه .علامہ محمد موسى خان روحاني البازي رحمه الله
    24 = ديوان القصائد . علامہ محمد موسى خان روحاني البازي رحمه الله
    25 = نيل الأرب من مصادر العرب . علامہ ظفر الدين تلميذ العلامة فیض الحسن سهارنپوری رحمهما الله
    26 = القراءة العربية . علامہ فيوض الرحمن رحمه الله
    27 = القراءة والأناشيد . علامہ فيوض الرحمن رحمه الله
    28 = مصباح اللغات . ( عربی ، اردو ) علامہ سيد عبد الدائم جلالي رحمه الله
    29 = مصباح اللغات . ( عربی ، اردو ) علامہ أبي الفضل عبد الحفيظ بلياوي رحمه الله
    30 = بيان اللسان . ( عربی ، اردو ) علامہ قاضي زين العابدين سجاد ميرٹهي رحمه الله
    31 = قاموس القرآن . علامہ قاضي زين العابدين سجاد ميرٹهي رحمه الله
    32 = توضيحات شرح سبع معلقات . علامہ قاضي سجاد حسين رحمه الله
    33 = لغات القرآن . علامہ عبد الرشيد نعماني ، علامہ سيد عبد الدائم جلالي رحمهما الله
    34 = ترجمة المقامات . علامہ عبد الصمد صارم رحمه الله
    35 = معين اللبيب في قصائد الحبيب . علامہ حبيب الرحمن عثماني ديوبندي رحمه الله
    36 = قصيدة مائة معجزة للنبي صلى الله عليه وسلم الملقبة بـ «لامية المعجزات» . علامہ حبيب الرحمن عثماني ديوبندي رحمه الله ، رسول الله صلي الله عليه وسلم کی نعت میں (253 ) ابیات پر مشتمل یہ انتہائی طویل وعجیب وبدیع قصیده ہے
    35 = حاشية مقامات الحريري . علامہ محمد إدريس كاندهلوي رحمه الله ، عربی ادب کی مشہور کتاب (مقامات) پر ایک مفید وعجیب حاشیہ ہے
    36 = حاشية مقامات الحريري .علامہ محمد حبيب الرحمن بن علامہ فضل الرحمن ديوبندي عثماني رحمهما الله
    37 = تسهيل الأدب . علامہ سليم الله خان حفظه الله تعالى ورعاه ، وفاق المدارس العربية پاكستان
    38 = الطريقة العصرية لتعليم اللغة العربية . علامہ عبد الرزاق اسكندر حفظه الله تعالى ورعاه – رئيس جامعة العلوم الإسلامية كراچی
    39 = حاشية مقامات الحريري . علامہ جمال أحمد ميرٹهي رحمه الله
    40 = الإفادات الجمالية . علامہ جمال أحمد ميرٹهي رحمه الله

    41 = ألقراءة الواضحة . ( تین اجزاء میں ) . علامہ وحيد الزمان قاسمی كيرانوي رحمه الله ، أستاذ الحديث والأدب دارالعلوم​ ديوبند ، علامہ موصوف دارالعلوم​ ديوبند کے مستند ومتبحر فضلاء اور حضرت شيخ الإسلام حسين أحمد مدني رحمه الله کے تلامذه میں سے ہیں ، دارالعلوم​ ديوبند کا عربی رسالہ " دعوةالحق " آپ ہی نے جاری فرمایا ، اور اس کے بعد عربی رسالہ " الداعي " بهی آپ کی زیر نگرانی جاری ہوا
    42 = القاموس الجديد . ( عربی ، اردو ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله
    43 = القاموس الجديد . ( اردو ، عربی ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله
    44 = القاموس الإصطلاحي . ( عربی ، اردو ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله
    45 = القاموس الإصطلاحي . ( اردو ، عربی ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله
    46 = القاموس الوحيد . ( اردو ، عربی ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله
    47 = نفحة الأدب . ( عربی ) علامہ وحيد الزمان كيرانوي رحمه الله


    یہ علم ادب میں علماء دیوبند کی خدمات کا یہ ایک سرسری جائزه تها ، اس میدان میں بهی ان کی کاوشوں کا احاطہ دشوار اور راقم الحروف کی استطاعت سے خارج ہے

    عقائد وکلام اورجدید عصری مسائل سے متعلق علماء دیوبند کی علمی آثار

    ان اکابراعلام کو الله تعالی نے اس صدی میں تجدید دین کے لیئے منتخب کیا تها ، اس لیئے دین حق کا کوئی شعبہ ایسا نہیں جس میں ان کے قلم نے جولانی نہ کی ہو ، اس باب میں بهی علماء دیوبند نے ایک کثیر مواد امت مسلمہ کو دیا ، بطور مثال کے چند مشہور کتب کا تذکره درج ذیل ہے

    1 = العقل والنقل . شیخ الاسلام شبیراحمد عثمانی رحمه الله
    2 = خوارق عادات . شیخ الاسلام شبیراحمد عثمانی رحمه الله
    3 = مسئلہ تقدیر . شیخ الاسلام شبیراحمد عثمانی رحمه الله
    4 = سائنس اوراسلام . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    5 = اشاعت اسلام . علامه حبیب الرحمن عثمانی رحمه الله
    6 = اسلامی معاشیات . علامه مناظراحسن گیلانی رحمه الله
    7 = اسلام کا اقتصادی نظام . علامه حفظ الرحمن سِیوُهاروی رحمه الله
    8 = اخلاق اور فلسفہ اخلاق . علامه حفظ الرحمن سِیوُهاروی رحمه الله
    9 = علم الکلام . علامه ادریس کا ندهلوی رحمه الله
    10 = آلاتِ جدیده . علامه محمد مفتی شفیع رحمه الله
    11 = اسلام اور مسئلہ غلامی . مولانا سعید احمد اکبرآبادی رحمه الله
    12 = احکام اسلام عقل کی نظر میں . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    13 = ترقی اور اسلام . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    14 = سوشلزم اور اسلام . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    15= سرمایہ دارانہ اور اشتراکی نظام کا موازنہ اسلام سے .علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    16 = کمیونزم اور اسلام . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    17 = عالمی مشکلات اور اس کا قرآنی حل . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    18 = اسلام دین فطرت هے . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    19= اسلام عالمگیر مذهب هے . علامه شمس الحق أفغانی رحمه الله
    20 = تسخیرکائنات اور اسلام . علامه یوسف بنوری رحمه الله
    21 = عقائد الإسلام . علامه محمد ادریس کا ندهلوی رحمه الله
    22 = حدوث مادة و روح . علامه محمد ادريس كاندهلوي رحمه الله
    23 = حاشية العقيدة الطحاوية . علامه قاری محمد طيب قاسمي رحمه الله
    24 = عقائد الفرائد حاشية شرح العقائد . علامه محمد طاهر قاسمي رحمه الله
    25 = الدين القيم . علامه مناظر أحسن گيلاني رحمه الله
    26 = أحسن الكلام في أصول عقائد الإسلام . علامه رحيم الله بجنوري رحمه الله
    27 = ترجمة شرح العقائد . علامه عبد الأحد ديوبندي رحمه الله
    28 = ترجمة تكميل الإيمان . علامه أنظرشاه كشميري رحمه الله
    29 = اسلامي عقائد . علامه محمد عثمان دربنگوي رحمه الله
    30- = أشرف الجواب . حكيم الأمة أشرف علي التهانوي رحمه الله


    اس کے علاوه حکیم الاسلام قاری محمد طیب اور علامہ منظور نعمانی اور علامہ مرتضى حسن چاند پوري اور علامہ مناظر احسن گيلاني رحمهم الله کی اس موضوع پر مخصوص کتب و رسائل بهی ہیں ، جن میں عقائد وعصری مسائل پر مفید واہم کلام کیا گیا ہے ، اسی طرح عصری تقاضوں کو ملحوظ رکهتے ہوئے اردو میں کتاب وسنت اور سیر وتاریخ اسلام کی وسیع تر اشاعت کے لیئے فضلاء دارالعلوم دیوبند نے (نَدوَة المُصَنّفین) کے نام سے ایک مستقل ادارے کی بنیاد ڈالی ، اور ان کی مساعی سے اردو میں جو مفید کتابیں و رسائل شائع ہوئیں اس کا مقابلہ کوئی ایک جماعت بلکہ سب جماعتوں کا دینی مواد ملا کر بهی مقابلہ نہیں کیا جا سکتا ، یہ محض مبالغہ پر مبنی ایک دعوی نہیں بلکہ ایک حقیقت ہے ، حاصل کلام یہ ہے کہ اس موضوع پر بهی علماء ديوبند کی علمی آثار کا احاطہ راقم الحروف کی استطاعت سے خارج ہے

    رحمهم الله تعالى جميعا وجزاهم عن الإسلام وأهله خير الجزاء وأحسن الجزاء
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-10-2013 at 08:26 AM.

  9. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور سیرت خاتم الانبیاء صلی الله علیہ وسلم


    سیرت طیبہ اور اس کے مختلف گوشوں پر علماء دیوبند کی تصانیف بے شمار ہیں ، جن کا احاطہ کرنا راقم الحروف کے لیے مشکل بلکہ ناممکن ہے ، بطور مثال چند مشہور کتب کا تذکره کرتا ہوں

    1 = نَشرُ الطِیب فی ذِکرِ النبی الحبیب . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    نہایت جامع ومختصر ومفید تالیف ہے ، جابجا روایات کی تحقیق وتنقید محدثانہ طریق پر کی گئ ہے ، بالخصوص واقعہ معراج پر بہت سیر حاصل اور محدثانہ کلام کیا گیا ہے
    2 = اسلام . مولانا عاشق الهی میرٹهی رحمه الله ، سیر ت پرایک جامع اور قدرے مفصل تصنیف ہے ، اصل کتاب چار حصوں میں ہے ، اور 8 ابواب پر مشتمل ہے
    3 = ماهتاب عرب . مولانا عاشق الهی میرٹهی رحمه الله
    4 = محمد صلی الله علیہ وسلم . از مولانا عبدالرحمن نگرامی رحمه الله ، اس کتاب میں موصوف نے ایک منفرد بحث کی ہے ، وه یہ کہ آپ صلی الله علیہ وسلم کا نام مبارک ، محمد ، کیوں رکها گیا ؟ فاضل مصنف نے پوری عالمانہ تحقیق سے اس سوال کا جواب دیا ہے ، اوریہ مضمون سیرت کے دیگر کتب میں نہیں ملتا
    5 = عهد نبوت کے ماه وسال . حکیم العصر مولانا محمدیوسف لدهیانوی شهید رحمه الله
    6 = خاتم الانبیاء . مفتی شفیع رحمه الله ایک مختصر مگرجامع تصنیف ہے
    7 = رسول کریم . مولانا حفظ الرحمن سِیُوهاروی رحمه الله
    8 = البلاغ المبین في مكاتيب سيد المرسلين . مولانا حفظ الرحمن سِیُوهاروی رحمه الله ، اس میں تقریبا باره مکتوبات نبوی صلی الله علیہ وسلم ہیں ، اور ان کی روایات پر نہایت بسط وتفصیل سے محققانہ ومحدثانہ بحث کی ہے
    9 = تاریخ اسلام . مولانا سید محمد میاں صاحب رحمه الله ، تین حصوں پرمشتمل ہے
    10 = رحمت کائنات . مولانا قاضی زاهدُ الحسینی رحمه الله ، سیرت پر ایک عظیم کتاب ہے
    11 = حیات نبویہ . مفتی محموداحمد صدیقی رحمه الله
    12 = اخلاق النبی . مولانا اشرف علی جالندهری رحمه الله
    13 = تجلیات مدینہ . مولانا اعجازالحق گنگوهی رحمه الله
    14 = مختصر سیرت نبویہ . مولانا عبدالشکور لکهنوی رحمه الله
    15 = النبیُ الخاتم . مولانا مناظراحسن گیلانی رحمه الله
    16 = سیرتُ المصطفی . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله ، تین حصوں پر مشتمل ہے ، سیرت پر بڑی مفصل ومدلل کتاب ہے
    17 =هادئ عالم . مولانا ولی رازی ابن مفتی اعظم مفتی محمد شفیع رحمهما الله
    18 = زبدة السير . مولانا عماد الدين شيركوٹي رحمه الله
    19 = وفات النبي . مولانا أخلاق حسين قاسمي رحمه الله
    20 = اشاعة الإسلام . مولانا حبيب الرحمن عثماني رحمه الله
    21= ترجمة السيرة الحلبية . مولانا محمد أسلم رمزي رحمه الله
    22 = حیات نبویة . مولانا محمود نانوتوی رحمه الله
    23 = مرقع سیرت . مولانا جمیل الرحمن سیوہاری رحمه الله

    علماء دیوبند اور رد مذہب شیعہ وروافض اور دفاع ناموس صحابہ رضی الله عنهم


    اس باب میں بهی ہراول دستے اور دفاع صحابہ کے صف اول کے محافظین کا کردار ادا کیا ہے ، اس موضوع پر لکهی گئ علماء دیوبند کی کتب ورسائل کی تعداد بهی بے شمارہے ، مثال کے طور چند گراں قدرعلمی وتحقیقی کتب کا تذکره درج ذیل ہے

    1 =هــديـــة الشــيعـة . حضرت الإمام مولانا الشيخ محمد قاسم النانَوتوي رحمه الله
    2 = هــدايـــة الشــيعـة . حضرت الإمام مولانا الشيخ رشید احمد گنگوهی رحمه الله
    3 = مطرقة الكرامة على مرآة الإمامة . مولانا الشيخ خلیل احمد سہارنپوری رحمه الله
    4 = هدایات الرشید الی افحام العنید . مولانا الشيخ خلیل احمد سہا رنپوری رحمه الله
    5 = أسدالغــابة فى معرفة الصحابــة . اردو ترجمہ ، مولانا عبدالشکورلکهنوی رحمه الله
    6 = إزالة الخـفــاء کا اردو ترجمہ . مولانا لکهنوی رحمه الله ۳ جلدوں میں
    7 = مقالات مختلفہ مقام صحابہ پر . حضرت الإمام مولانا الشيخ حسين احمد مدني رحمه الله
    8 = کشف التلبیس . ۳ جلدوں میں ، مولانا ولایت حسین رحمه الله تلمیذ مولانا الشيخ خلیل احمد سہارنپوری رحمه الله
    9 = إرشاد الشــيعـة . مولانا سرفراز خان صفدر رحمه الله
    10 = حقیقت شیعہ . علامہ مهر علي رحمه الله
    11 = ایرانی انقلاب اور خمینی . علامہ منظور أحمد نعماني رحمه الله
    12 = تحفہ امامیہ . علامہ حافظ مهر محمد ميانوالي رحمه الله
    13 = عقائد شیعہ . علامہ حافظ مهر محمد ميانوالي رحمه الله
    14 = فقہ جعفریہ اور مسلمان . علامہ حافظ مهر محمد ميانوالي رحمه الله
    15 = شیعہ کیوں مسلمان نہیں ؟ . علامہ قاضي مظهر حسين رحمه الله
    16 = عظیم فتنہ . علامہ قاضي مظهر حسين رحمه الله
    17 = ارتداد شیعہ . علامہ عبد الشکور لكهنوي رحمه الله
    18 = شیعہ سنی اختلاف . علامہ محمد يوسف لدهيانوي شهيد رحمه الله
    19 = شیعہ اکابرین امت کی نظر میں .
    20 = جلاء الأذهان . مناظر اہل سنت علامہ دوست محمد قريشي رحمه الله
    21 = البراهين لأهل السنة . مناظر اہل سنت علامہ دوست محمد قريشي رحمه الله
    22 = تعارف خلفاء الراشدين . مناظر اہل سنت علامہ دوست محمد قريشي رحمه الله
    23 = اسلام اور شیعیت کا تقابلی جائزه . علامہ مهر محمد رحمه الله
    24 = فتنہ رفض . علامہ منظور أحمد نعماني رحمه الله
    25 = دفع المجادلة عن آيات المباهلة . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    26 = المنار رسائل السنة والشيعة . علامہ حكيم محمد رحيم الله بجنوري رحمه الله
    27 = إبطال أصول الشيعة . علامہ حكيم محمد رحيم الله بجنوري رحمه الله
    28 = ألأجوبة الكاملة . قاسم العلوم والخيرات علامہ محمد قاسم نانوتوي رحمه الله
    29 = إزالة الشک عن مسألة فدك . علامہ عبد الستار تونسوي رحمه الله
    30 = حديث الثقلين . للشيخ علامہ محمد نافع رحمه الله
    31 = شیعہ اور قرآن . علامہ ضياء الرحمن فاروقي شهيد رحمه الله
    32 = ترجمه فرمان علی پر ایک نظر . علامہ محمد يوسف لدهيانوي شهيد رحمه الله
    33 = مجموعة تفاسير لكهنوي . علامہ عبدالشكور لكهنوي رحمه الله
    34 = ہم سنی کیوں ہیں ( بجواب مين شيعه كيون ہوا) . علامہ حافظ مهر محمد ميانوالی رحمه الله
    35 = عجمی سازش . علامہ قاضي شمس الدين رحمه الله
    36 = مذہب شیعہ . علامہ الله یار چکڑالوی رحمه الله
    37 = قاتلان حسین کی خانہ تلاشی . علامہ عبدالشكور لكهنوي رحمه الله
    38 = تاریخی دستاویز . مولانا ضياء الرحمن فاروقي شہید رحمه الله
    یہ کتاب ایک عظیم کارنامہ ہے ، اس باب میں لکهی گئ تمام اہل سنت والجماعت کی کتب اور آراء وتحقیقات کا خلاصہ وحاصل ہے ، شیعہ مذہب کے مستند کتب کے اصل عکس اور بے شمار حوالوں کو اس کتاب میں جمع کیا گیا ہے ، جس کو پڑہنے کے بعد شیعہ مذہب کا حقیقی چہره بالکل واضح ہوتا ہے ، تقریبا سات سو سے زیاده صفحات پر یہ کتاب مشتمل ہے
    فجزاهم الله تعالى عنا وعن المسلمين كل خير
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-12-2013 at 07:48 AM.

  10. The Following User Says Thank You to Hafiz M Khan For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  11. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء دیوبند اور علم القراءات والتجويد


    علم تجوید کا وجوب کتاب وسنت واجماع امت سے ثابت ہے ، اسی وجہ سے علماء الإسلام نے ہر زمانہ میں درس وتدریس وتصنیف وتالیف کے ذریعہ اس علم کی دعوت وتبلیغ کو جاری رکها ، علوم تجوید وقراءت قرآن مجید کے لب ولہجہ اور طرز ادا کی حفاظت کرنے والے علوم ہیں ، متقدمین علماء کے نزدیک علم تجوید پر الگ تصانیف کا طریقہ نہیں تها بلکہ تجوید علم الصرف کا ایک نہایت ضروری باب تها ، متاخرین علماء نے اس علم میں مستقل اور تفصیلی کتابیں لکهیں ، چنانچہ (اَلرِّعایَة) محمد بن مکی رحمه الله کی کتاب اس سلسلہ کی پہلی کڑی ہے ، جو چوتهی صدی ہجری میں لکهی گئ علم قراءت الفاظ وحی کے اس اختلافی طرز ادا کو کہتے ہیں جو کلمات قرآنیہ میں مِن جانِبِ الله سات قراءتوں کی حد تک اختلاف طرز تکلم نازل کیا گیا ، یہ الگ فن ہے ائمہ قراءت اور علماء امت نے اس فن پر ہر دور میں مبسوط ومختصر کتب کے انبار تصنیف کیئے ، یہ تو علم تجوید وقراءت کی تاریخی حیثیت پر مختصر تذکره تها ، علماء دیوبند نے اس میدان میں بهی تجدید ی کارنامے انجام دیئے ، اور دیگر علوم وفنون کی طرح تشنگان علوم تجوید وقراءت کو بهی خوب سیراب کیا ، دارالعلوم میں تجوید وقراءت کے پہلے استاذ حضرت قاری عبدالوحید رحمه الله تهے ، حضرت قاری طیب رحمه الله اوران کے بهائ قاری طاہر رحمه الله قاری صاحب کے ہی ارشد تلامذه میں سے ہیں ، قاری عبدالوحید رحمه الله تجوید وقراءت کے ممتاز وماہر شیخ واستاذ تهے ، اور دارالعلوم کو یہ امتیازی حیثیت حاصل رہی کہ وہاں تجوید وقراءت کے فنون سے بهی علماء وطلباء کو مزین کیاگیا ، اور علوم عربیہ سے منسلک ہر قسم کے طالب علم کے لیئے تجوید وقراءت میں استفاده لازمی تها ، دارالعلوم سے منسلک قُراء کرام کے علمی و تصنیفی کارناموں کے لیئے تو ایک دفتر چاہیئے ، بطورنمونہ کے چند مشہور کتب کا ذکرکرتا ہوں

    1 = جمال القرآن . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    2 = تجوید القرآن منظوم . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    3 = تنشیط الطبع فی إجراء السبع . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    4 = رفع الخلاف فی حکم الاوقاف . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    5 = وجوه المثانی . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    6 = زیادات علی کتب الروایات . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    7 = ذنابات لما فی الروایات . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    8 = یادگار حق القرآن . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    9 = متشابهات القرآن لتراویح رمضان . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    10 = آداب القرآن . حكيم الأمة مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    11 = فـوائـد مكية .قاری عبدالرحمن مکي رحمه الله
    12 = شـرح عقیلة رسم عثماني . قاری عبدالرحمن مکي رحمه الله
    13 = حاشـية فـوائـد مكية . قاری عبد المالك رحمه الله
    14 = حاشیة جمال القرآن . قاری حفظ الرحمن رحمه الله
    15 = حاشـية الفوائد مكية . قاری حفظ الرحمن رحمه الله
    16 = حاشـية الفوائد مكية . قاری محب الدین رحمه الله
    17 = حاشـية الفوائد مكية . علامه مفتي سعید أحمد رحمه الله مظاهرالعلوم سهارنپور
    18 = حاشـية الفوائد مكية . قاری محمد شریف رحمه الله
    19 = شرح الجزرية . قاری محمد شریف رحمه الله
    20 = معلم التجوید . قاری محمد شریف رحمه الله
    21 = زینة القرآن .قاری محمد شریف رحمه الله
    22 = رسالة فی تشریح حرف الضاد . قاری محمد شریف رحمه الله
    23 = معارف التجوید . قاری حبیب الله رحمه الله
    24 = تیسیر التجوید . قاری عبدالخالق سهارنپوري رحمه الله
    25 = تنزیل الطبع فی إجراء السبع . قاری تاج محمد رحمه الله
    26 = تسهیل البیان فی رسم القرآن . قاری نذر محمد لکهنوي رحمه الله
    27 = ضوابط نبلاء التجوید . قاری عبدالمعبود لکهنوي رحمه الله
    28 = شرح الشاطبیة .قاری محمد سلیمان رحمه الله مظاهرالعلوم سهارنپور
    29 = شرح الشاطبیة . قاری إظهار أحمد تهانوي رحمه الله
    30 = شرح الجزرية . قاری إظهار أحمد تهانوي رحمه الله
    31= شرح الشاطبیة . ( مفصل شرح ) قاری فتح محمد رحمه الله
    32 = شرح الرائیــة . قاری فتح محمد رحمه الله
    33 = شرح الجزرية . قاری فتح محمد رحمه الله
    34 = شرح ناظمة الزهر . قاری فتح محمد رحمه الله
    35 = ترجمة كتاب ( التيسير) للإمام الداني . قاری رحیم بخش رحمه الله
    36 = ترجمة كتاب ( الوجوه المسفرة في القراأت الثلاث ) للإمام المتولي .قاری رحیم بخش رحمه الله
    37 = هدیــة الوحید . قاری عبدالوحيد الملقب بـ شيخ القراء رحمه الله ، یہ کتاب فن تجوید کی مبسوط ومکمل اور جامع کتاب ہے ، بعد کے مختلف رسائل تجوید جو برصغیرمیں تصنیف ہوئے ، کم وبیش سب مسائل کے وثوق وثبوت کے لیئے سند کے طور پر ان میں اسی کتاب کا نام ہی ملتا ہے
    38 = حاشیة خلاصة البیان فی تجویدالقرآن . قاری سلیمان دیوبندي رحمه الله
    39 = ضیاء التجوید . قاری سلیمان دیوبندي رحمه الله
    40 = راهنمائے تجوید المعروف بــ میزان التجوید . قاری سلیمان دیوبندي رحمه الله
    41 = جواهر الضیائیة شرح متن الشاطبیة . قاری سلیمان دیوبندي رحمه الله
    انتہائی مفصل وجامع شرح ہے
    42 = فوائد مرضیة شرح مقدمة الجزریة . قاری سلیمان دیوبندي رحمه الله
    43 = مظاهر التجوید . علامہ قاری سید محمد إبراهیم سهارنپوری رحمه الله
    44 = تعلیم التجوید . علامہ قاری رضوان نسیم مظاهری رحمه الله
    45 = صریح النص فی روایة حفص . علامہ قاری رضوان نسیم مظاهری رحمه الله
    46 = حاشیة ( التيسير) للإمام الداني . علامہ قاری رضوان نسیم مظاهری رحمه الله
    47 = تحفة الإخوان فی بیان أحکام القرآن . للشيخ العلامة الإمام محمد زكريا الكاندهلوي رحمه الله
    48 = شرح خلاصة البیان . علامہ عاشق إلهي بلند شهری رحمه الله
    49 = ضروری مسائل قراءت . علامہ قاری سلطان محمود رحمه الله
    50 = تسهیل التجوید . علامہ قاری صديق أحمد باندوي رحمه الله
    51 = میزان التجوید . علامہ قاری محمد نثار دیوبندی رحمه الله
    52 = وضوح الفجر فی القراآت الثلاث المتممة للعشر . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    53 = فیوض المهرة فی المتون العشرة . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    54 = کمال الفرقان شرح جمال القرآن . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله ، یہ مجموعہ درحقیقت صرف جمال القرآن ہی کی نہیں بلکہ پورے کے پورے فن تجوید کی انتہائی مفصل و مبسوط قیمتی اور پیش بہا شرح و توضیح ہے، اس ایک ہی کتاب کا مطالعہ فن تجوید کی بہت سی کتابوں کی ورق گردانی و مراجعت سے بے نیاز کرسکتا ہے
    55 = کشف النظر شرح کتاب النشر . (تین ضخیم جلدوں میں) علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله ، یہ علامہ محقق شمس الملة والدین امام ابو الخیر محمد بن محمد الجزری الشافعی متوفی ۸۳۳ھ کی قراآت عشرہ کی معرکة الاراء شہره آفاق و عظیم المرتبت کتاب ”النشر الکبیر“ کا تین ضخیم جلدوں میں تشریح و توضیح سمیت اردو ترجمہ ہے ، معلوماتی کتاب ہے
    56 = کاشف العسر شرح ناظمة الزهر . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    57 = المرآة النیرة فی حل الطيبة .علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    58 = تسهیل القواعد . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    59 = التحقیق اللطیف فی الوقف علی لام التعریف .علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    60 = قرأت امام ابن عامر شامي . تصحيح ، علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    61 = دفاع القراآت . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    62 = ترجمة كتاب طبقات القراء . لإبن الجزري ، علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    63 = تاريخ علم القراآت . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    64 = تاریخ علم التجوید .علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله ، اس مختصر رسالہ میں علم تجوید و اوقاف کی ضرورت و اہمیت، فن تجوید کی تدوین، اس کے اہم فوائد و منافع، روایت حفص کی پوری سند، تجوید کے وجوب کے دلائل، قرآن و حدیث ،اجماع و قیاس و اقوال سے منکرین تجوید کے چند شبہات اور ان کے جوابات، تجوید و قرأت سے متعلق چند فقہی مسائل وغیرہ وغیرہ ،ان تمام چیزوں پر نہایت عمدہ طریق سے روشنی ڈالی گئی ہے
    65 = الهدية الطاهرية في الآيات القرآنية . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله ، اس رسالہ میں پورے قرآن کریم کی اختلافی اور اتفاقی آیات کا خلاصہ نہایت مختصر پیرایہ میں درج کیا گیا ہے
    66 = رسالہ روایت ورش بطریق اصبهانی . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    67 = رسالہ روایت امام شعبہ بطریق طیبہ. علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    68 = رسالہ روایت قالون . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله
    69 = سلك اللآلي والمرجان شرح نظم أحكام ألئن . علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله

    علامہ قاری محمد طاهر رحیمی رحمه الله نے درس و تدریس کے علاوہ تصنیف وتالیف کے میدان میں تجوید وقراءت کے موضوع پر خصوصا اور دیگر مختلف موضوعات پر عموما بیش بہا علمی وتحقیقی کتب ورسائل اور حواشی وضمائم تالیف فرمائے ، آپ نے مدینہ منوره ہجرت فرمائی ، بیس سال تک وہاں مقیم رہے ، اور مدینہ منوره میں ہی آپ کا انتقال ہوا ، اور جنة البقيع میں مدفون ہوئے

    رحمهم الله جميعا رحمة واسعة وجزاهم خيرا وكاملا على ما بذلوا من جهد جهيد في خدمة كتاب الله المجيد وعلى ما قدموا لنصرة دين الله المتين
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-11-2013 at 01:47 PM.

  12. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts


    علماء دیوبند اور تحفظ ودفاع عقیده ختم نبوت

    علماء دیوبند نے منکرین ختم نبوت کے وساوس وشبهات کی رد وتعاقب میں جس قدر کتابیں لکهی ہیں ، غالبا کسی مُلحدانہ تحریک پر اتنی کتابیں ورسائل نهیں لکهیں ، ان اکابر نے فتنہ انکارختم نبوت سے متعلق ہرمسئلہ پرگراں قدر علمی وتحقیقی کتابیں تالیف کرکے امت مسلمہ کی ایمان واسلام کی حفاظت وصیانت کا بهرپورحق اداکیا ، اور منکرین کے تمام وساوس ودجل وفریب کو طشت ازبام کیا، یہاں چند کتب کا تذکره کرتا ہوں

    1 = ألشهاب . شیخ الاسلام شبیراحمد عثمانی رحمه الله
    2 = ألقادیانی والقادیانیة . مولانا ابوالحسن علی ندوی رحمه الله
    3 = ایمان وکفر . مفتی شفیع رحمه الله
    4 = ألقولُ المُحکم . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    5 = أئمہ تلبیس . مولانا ابوالقاسم رفیق دلاوری رحمه الله
    6 = ایمان کے ڈاکو . مولانا ابوالقاسم رفیق دلاوری رحمه الله
    7 = خاتم النبیین . امام العصر مولانا انورشاه کشمیری رحمه الله
    8 = اکفارُالمُلحدین . امام العصر مولانا انورشاه کشمیری رحمه الله
    9 = تَحِیة الاسلام . امام العصر مولانا انورشاه کشمیری رحمه الله
    10 = ختم النبوة فی القرآن . مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله
    11 = ختم النبوة فی الحدیث . مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله
    12 = ختم النبوة فی الاثار . مفتي محمد شفيع ديوبندي رحمه الله
    13 = ختم نبوت اور بزرگان امت . مولانا لال حسین اختر رحمه الله
    14 = ختم نبوت اورنزول عیسی علیہ السلام . مولانا عبدالرشید رحمه الله
    15 = ألخطاب الملیح فی تحقیق المهدی والمسیح . مولانا الشيخ اشرف على تهانوي رحمه الله
    16 = عقیدة الاسلام . امام العصر مولانا انورشاه کشمیری رحمه الله
    17 = حیات عیسی علیہ السلام . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    18 = ألمُتنبی القادیانی . مولانا مفتی محمود رحمه الله
    19 = رئیس قادیان . مولانا ابوالقاسم دلاوری رحمه الله
    20 = دین مرزا . مولانا مرتضی حسن چاند پوری رحمه الله
    21 = شرائط نبوت . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    22 = دعاوی مرزا . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    23 = نزول عیسی . مولانا بدرعالم میرٹهی رحمه الله
    24 = مِسکُ الختام فی ختم النبوة خیر الانام . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    25 = مولانا نانوتوی پرمرزائیوں کا الزام . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    26 = مسلمان کون کافرکون . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    27 = مرزاکی آسان پهچان . مولانا عبدالرحیم اشعر رحمه الله
    28 = کفرواسلام کی حدود . مولانا منظورنعمانی رحمه الله
    29 = اسلام اور مرزائیت . مولانا عتیق الرحمن رحمه الله
    30 = ترک مرزائیت . مولانا لال حسین اختر رحمه الله
    31 = عقیدة الاُمة فی معنی ختم النبوة . علامہ خالد محمود حفظه الله
    32 = حقیقت مرزائیت . مولانا عبدالکریم رحمه الله
    33 = فتنة قادیانیت . مولانا یوسف بنوری رحمه الله
    34 = اسلام اور مرزائیت . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    35 = کفریات مرزا . مولانا حافظ نورمحمد مظاهری رحمه الله
    36 = مُغلظات مرزا . مولانا حافظ نورمحمد مظاهری رحمه الله
    37 = مسیح علیہ السلام مرزا کی نظر میں . مولانا لال حسین اختر رحمه الله
    38 = آئینہ قادیانی . مولانا عبدالرحمن مونگیر ی رحمه الله
    39 = قادیانیت . مولانا ابوالحسن ندوی رحمه الله
    40 = علامات قیامت اورنزول مسیح علیہ السلام . مفتی رفیع عثمانی حفظه الله
    41 = هدایة المُعتدی . مولانا عبدالغنی خان رحمه الله
    42 = لطائف الحِکَم فی أسرارنزول عیسی ابن مریم . مولانا ادریس کاندهلوی رحمه الله
    43 = مسئلہ ختم نبوت علم وعقل کی روشنی میں . مولانا اسحق سندیلوی رحمه الله
    44 = أشدالعذاب . مولانا مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    45 = أول السبعین . مولانا مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    46 = صحیفة الحق . مولانا مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    47 = ثانی السبعین . مولانا مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    48 = تحفہ قادیانیت . مولانا یوسف لدهیانوی شہید رحمه الله
    49 = ألاربعین 40 احادیث عقیده ختم نبوت پر . مفتی شفیع رحمه الله
    50 = قادیانیت پرغورکرنے کا سیدها راستہ . مولانا منظورنعمانی رحمه الله
    51 = كذبات مرزا . علامه نور محمد المظاهري رحمه الله
    52 = اختلافات مرزا . علامه نور محمد المظاهري رحمه الله
    53 = کرشن مرزا .علامه نور محمد المظاهري رحمه الله
    54 = ردقادیانیت کے زریں اصول . علامه منظور أحمد چينوٹي رحمه الله
    55 = جھوٹے نبی . علامه أبوالقاسم رفیق دلاوري رحمه الله
    56 = إحتساب قاديانيت . یہ کتاب تیس سے زائد ضخیم جلدوں میں ہے ، اور ہر جلد کبار علماء کے قیمتی ابحاث ومقالات پر مشتمل ہے
    57 = فتاوى ختم النبوة . تین جلدوں میں ، علامه سعيد أحمد جلال پوري شهيد رحمه الله
    58 = موقف الأمة الإسلامية من القاديانية . محدث كبير محمد يوسف بنوري رحمه الله
    59 = القادياني ومعتقداته . علامه منظور أحمد چينوٹي رحمه الله
    60 = مقالات ختم النبوة . علامه منظور أحمد چينوٹي رحمه الله


    یہ چند کتب کا تذکره بطورمثال کیاگیا جوصرف اکابرعلماء دیوبند نے تحریر کی ہیں ، اور اس باب میں صرف علماء دیوبند کی لکهی ہوئی تمام کتب کا احاطہ بہت دشوار ہے


    علماء ديوبند اور فتنہ انکار حدیث کا رد اور دفاع حدیث

    سنت نبويه بالاجماع اسلام کا بنیادی واساسی مصدر ہے ، اور دین حق کا اکثر حصہ سنت مطہره کے ذریعے منقول ہے ، امت مسلمہ کو تاریخ میں جن فتنوں سے واسطہ پڑا ہے ، ان تمام فتنوں میں سب سے بڑا فتنہ اور خطرناک فتنہ انکار سنت کا فتنہ ہے ، انکار سنت کا فتنہ اسلامی تاریخ میں سب سے پہلے دوسری صدی ہجری کے اواخر میں اٹھا تھا ، اور اس کے اٹھانے والے شیعہ و خوارج اور معتزلہ تھے ، محدثین کرام وعلماء اسلام نے اس فتنہ کے خلاف شروع دن سے زبردست علمی و تحقیقی کام کیا ، اور ان کے تمام شیطانی وساوس ونفسانی تاویلات کا قلع قمع کیا ، اس طرح یہ فتنہ فناء کے گهاٹ میں اترا ، اور کئی صدیوں تک یہ شیطانی فتنہ منظم انداز سے سر اٹها نہ سکا ، یہاں تک کہ تیرہویں صدی ہجری میں یہ فتنہ ہندوستان میں پھر اٹھا ، اور سرزمین ہند میں اس کو اٹهانے والے لوگوں میں سرفہرست سر سید احمد خان اور مولوی چراغ علی اور مولوی عبد اللہ چکڑالوی اور مولوی احمد الدین امرتسری اور مولوی اسلم جیراج پوری تهے ، اور آخر کار اس شیطانی فتنہ کا جهنڈا چودھری غلام احمد پرویز نے اٹهایا ، اور پهر اس ملعون نے اس کو ضلالت وگمراہی کی انتہاء تک پہنچایا ، اور اس مردود نے اپنی ساری عمر حدیث وسنت کی دشمنی میں گزاری ، اور اپنے تمام وسائل اور دماغی وقلمی تمام طاقتیں احادیث کو بے وقعت بنانے کے لئے صرف کیں ، اور آج تک ان خبیث لوگوں کے ناپاک اثرات کتب ورسائل وآواز کی صورت میں پائے جاتے ہیں ، علماء ديوبند نے شروع دن سے اس شیطانی فتنہ کا علمی وعملی تعاقب کیا ، اور ان کے كفروضلال سے امت کو آگاه کیا ، اور سنت شریفہ کا بهرپور دفاع کیا ، اور ان مجرمين وضالين کے رد میں اور سنت شریفہ کے دفاع میں عربي وفارسي واردو وہندي وانگریزی وغیره میں بے شمار کتب ورسائل تحریر کیں ، ان میں سے چند کتابوں کا نام بطور نمونہ درج ذیل ہیں

    1 = انکار کے حدیث نتائج .علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    2 = حدیث رسول کا تشریعی مقام . علامہ محمد ادريس ميرٹهي رحمه الله
    3 = نصرة الحديث .علامہ حبيب الرحمن اعظمي رحمه الله
    4 = حفاظت حديث وحجيت حديث . علامہ فهيم عثماني رحمه الله
    5 = تدوين الحديث . علامہ مناظرحسن گیلانی رحمه الله
    6 = فتنة إنكار حديث . مفتي رشيد أحمد لدهيانوي رحمه الله
    7 = شوق حديث . علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    8 = فهم قرآن . علامہ سعيد أحمد أكبرآبادي رحمه الله
    9 = السنة ومكانتها في الإسلام . ( عربی ) علامہ حبيب الله مختار شهيد رحمه الله
    10 = حُجية الحديث . علامہ محمد ادريس الميرتهي رحمه الله
    11 = اسلام میں سنت اور حدیث کا مقام . علامہ محمد ادريس ميرٹهي رحمه الله ، یہ کتاب (السنة ومكانتها في الإسلام) کا اردو ترجمہ ہے
    12 = مقدمہ درس ترمذی . علامہ مفتي محمد تقي عثماني حفظه الله
    13 = فتنہ انکار حدیث کا پس منظر .علامہ عاشق الهي بلند شهري رحمه الله
    14 = مقدمة ترجمان السنة . علامہ بدر عالم ميرٹهي رحمه الله
    15 = تاريخ الحديث . علامہ عبدالصمد صارم رحمه الله
    16 = آثار الحديث . علامہ خالد محمود حفظه الله
    17 = انکار حدیث کیوں ؟. علامہ محمد يوسف لدهيانوي شهيد رحمه الله
    18 = فتنه إنكار حديث . علامہ مفتي الأعظم محمد ولي حسن ٹونكي رحمه الله
    19 = مقام حديث مع ازالة شبهات .علامہ فيض احمد رحمه الله
    20 = بصائر السنة . علامہ امین الحق صاحب طوری رحمه الله
    21 = حدیث قرآن کریم کی نظر میں . علامہ سید محمد یوسف بنوری رحمه الله

    رحمهم الله واجزهم خيرالجزاء وأدخلهم دارالسلام ونفعنا بعلومهم وفيوضهم
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-13-2013 at 10:47 AM.

  13. Join Date
    Nov 2009
    Posts
    635
    Thanks
    0
    Thanked 130 Times in 81 Posts

    علماء ديوبند اور رد فتنہ انکار تقلید


    بدقسمتی سے ہندوستان میں انگریزی دور میں جہاں اور بہت سارے فتنے اور فرقے پیدا کیے گئے ، ان میں سے ایک فرقه أهل حديث کے نام سے پیدا کیا گیا یہ فرقه جدید حالات کی مناسبت مختلف نام بدلتا رہا ، اس فرقہ کے ہمنواوں نے شروع میں اپنا نام (( مؤحدين )) پهر (( محمديين )) پهر (( غيرمقلدين )) پهر (( أهل حديث)) رکها ، اور آج کل یہ حضرات اپنے لیے (( سلفي )) و (( اثري )) کا لقب بهی اپنے لیے استعمال کرتے ہیں ، لیکن انگریزی دور میں حکومتی کاغذات میں اس فرقہ کا نام أهل حديث ہی لکها گیا ، اور اسی نام سے زیاده مشہور ہوا ، اس فرقہ جدید کے بنیادی نظریات یہ ہیں
    ائمہ اربعہ کی تقلید کا نہ صرف انکار بلکہ اس کو شرک فی الرسالت سے تعبیر کرنا ، بیس رکعت تراویح کو بدعت عمری کہنا ، ایک مجلس کی تین طلاق کو ایک شمار کرنا ، فاتحہ خلف الامام نہ پڑهنے والوں کی نماز کو باطل کہنا ، رفع یدین نہ کرنے والوں کی نماز کو غلط کہنا ، صحابہ کرام کے قول و فعل و فہم کو حجت نہ سمجهنا ، اجماع امت کا انکار کرنا ، خصوصا امام ابو حنیفہ رحمه الله اور ان کے متبعین پر لعن طعن کرنا ، کرامات اولیاء کا انکار کرنا اور اس کا مذاق اڑانا ، علم فقہ کو قرآن وحدیث کے مخالف کہنا اور برے الفاظ سے یاد کرنا ، صحابہ کرام کے اجماع کو حجت نہ سمجهنا وغیره وغیره ، علماء ديوبند نے اس فرقہ جدید کے فاسد نظریات اور غلط وباطل مزاعم کی رد وتعاقب میں بیش بہا علمی وتحقیقی مفصل ومختصر کتب ورسائل لکهے ہیں ، بطور نمونہ چند کا تذکره درج ذیل ہے


    1 = تقليد شخصي . مفتي محمد شفيع رحمه الله
    2 = تقليد ائمة ومقام أبي حنيفة . علامہ اسماعيل سنبهلي رحمه الله
    3 = الكلام المفيد في إثبات التقليد . علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    4 = تقليد كى شرعى حيثيت . مفتي محمد تقي عثماني حفظه الله
    5 = تقليد أئمه كا مسئله . مفتي محمد تقي عثماني حفظه الله
    6 = خيرالتنقيد في سير التقليد . علامہ خير محمد جالندهري رحمه الله
    7 = تحقیق مسئله تقليد . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    8 = السهم الحديد في نحر العنيد ( في جواب نتائج التقليد ) . علامہ سید أمين الحق رحمه الله
    9 = الكلام الفريد في التزام التقليد . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    10 = تنقيح التنقيد . علامہ مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    11 = خير البراهين في رد غير المقلدين . علامہ خير محمد جالندهري رحمه الله
    12 = اجتہاد اور تقلید . حکیم الاسلام قاری محمد طیب رحمه الله
    13 = تقليد واجتهاد . علامہ محمد ادريس كاندهلوي رحمه الله
    14 = ترک تقلید کے بهیانک نتائج . علامہ بشیر احمد قادری رحمه الله
    15 = انتصارالحق فی اکساد واباطیل معیار الحق . علامہ ارشاد حسین رام پوری رحمه الله
    16 = سبيل الرشاد . امام الرباني علامہ رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    17 = الأدلة الكاملة . شيخ الهند علامہ محمود حسن ديوبندي رحمه الله ، اس رسالہ میں فرقه أهل حديث کے ایک بانی ومؤسس مولانا محمد حسين بٹالوي کے دس سوالوں کے مسکت جوابات ہیں
    18 = إيضاح الأدلة . شيخ الهند علامہ محمود حسن ديوبندي رحمه الله ، یہ کتاب ( مصباح الأدلة ) کا جواب ہے ، جو (ادله کامله) کے جواب میں لکهی گئ
    19 = فتح المبين في كشف مكائد غير المقلدين . علامہ منصور علي خان مراد آبادي تلميذ الإمام محمد قاسم النانوتوي رحمه الله ، یہ کتاب ( ظفرالمبين في مغالطات المقلدين ) کے جواب میں لکهی گئ ، اور فرقه أهل حديث کے مغالطات ووساس کی رد میں انتہائی بہترین ومدلل کتاب ہے
    20 = الإقتصاد في بحث التقليد والإجتهاد . حكيم الأمة أشرف علي تهانوي رحمه الله
    21 = حفظ الرحمن لمذهب النعمان . علامہ حفظ الرحمن سيوهاروي رحمه الله
    22 = الحق الصریح فی اثبات التراویح . علامہ محمد قاسم نانوتوي رحمه الله
    23 = الرأي النجيح في عدَد التراويح . امام رباني علامہ رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    24 = ركعات تراويح . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    25 = ركعات تراويح . علامہ عبد الباری قاسمی رحمه الله
    26 = ینابیع ترجمہ رسالہ تراويح . علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    27 = التوضیح عن رکعات التراویح . علامہ ابو القاسم دلاوری رحمه الله
    28 = تحقیق مسئله تراویح . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    29 = خیرالبیان فی عدَد رکعات رمضان . علامہ بشیراحمد رحمه الله
    30 = مسنون نماز تراویح . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    31 = خیرالمصابیح فی عدَد رکعات التراویح . علامہ خير محمد جالندهري رحمه الله
    32 = القول الفصيح في عدَد التراويح . علامہ قاضي شمس الدين رحمه الله
    33 = القول الصحيح في عدَد التراويح . علامہ قاضي شمس الدين رحمه الله
    34 = بیس رکعات تراویح کا احادیث سے ثبوت . پیر مشتاق علی شاه حفظه الله
    35 = بیس تراویح . علامہ فیاض خان سواتي حفظه الله
    36 = الأعلام المرفوعة في حكم الطلقات المجموعة . علامہ حبيب الرحمن الأعظمي رحمه الله
    37 = عمدة الأبحاث . علامہ فقیر محمد جہلمی رحمه الله
    38 = عمدة الأثاث فی حکم طلقات الثلاث . علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    39 = تین طلاق قرآن وسنت کی روشنی میں . مفتی عبدالستار حفظه الله
    40 = طلاق ثلاث صحیح عقائد کی روشنی میں . علامہ حبيب الرحمن قاسمی رحمه الله
    41 = الدليل القوي على ترك قراءة المقتدي . علامہ أحمد علي سهارنپوري رحمه الله
    42 = هدية المعتدي في قراءة المقتدي . امام رباني رشيد أحمد گنگوهي رحمه الله
    43 = توثيق الكلام في انصات المقتدي خلف الإمام . علامہ محمد قاسم نانوتوي رحمه الله
    44 = الدليل المحکم . علامہ محمد قاسم نانوتوي رحمه الله
    45 = فصل الخطاب في مسئلة أم الكتاب . علامہ محمد أنورشاه كشميري رحمه الله
    46 = فاتحة الکلام . علامہ ظفر احمد عثمانی رحمه الله
    47 = أحسن الكلام في ترك قراءة خلف الإمام . علامہ سرفراز خان صفدر رحمه الله
    48 = تدقیق الكلام . علامہ عبدالقدیر کیمبل پوری رحمه الله
    49 = الفرقان فی قراءة أم القرآن . علامہ ناظر حسین میرٹهی رحمه الله
    50 = نيل الفرقدين في مسألة رفع اليدين . علامہ محمد أنورشاه كشميري رحمه الله
    51 = بسط اليدين . علامہ محمد أنورشاه كشميري رحمه الله
    52 = أنوارالعینین . علامہ أشفاق الرحمن کاندهلوی رحمه الله
    53 = نورالصباح . علامہ حبیب الله ڈیروی حفظه الله
    54 = تحقیق مسئله رفع یدین . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    55 = غیرمقلدین اور رفع یدین . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    56 = اسوه سرور کونین فی ترک رفع یدین .علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    57 = مباحثه رفع یدین . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    58 = سنت رسول الثقلین فی ترک رفع یدین .علامہ عبدالرشید کشمیری رحمه الله
    59 = اظهار التحسين في إخفاء التامين . علامہ حبيب الله ڈيروي رحمه الله
    60 = حبل المتین فی اخفاء التامین . علامہ ظهیر حسن نیموی رحمه الله
    61 = غیر مقلدین كى دائرى . علامہ أبوبكر غازي پوري رحمه الله
    62 = صحابہ کے بارے میں غیر مقلدین کا نقطہ نظر. علامہ أبوبكر غازي پوري رحمه الله
    63 = وقفة مع اللامذهبية في شبه القارة الهندية . علامہ أبوبكر غازي پوري رحمه الله
    64 = انكشاف حقيقت . علامہ عبدالقدوس قارن رحمه الله
    65 = حديث اورأهل حديث . علامہ أنوار خورشيد رحمه الله
    66 = غیر مقلدین كے اعتراضات کی حقیقت . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    67 = مجموعة رسائل . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله
    68 = تجليات صفدر . علامہ محمد أمين صفدر أوكاڑوي رحمه الله


    علماء دیوبند اور رد بدعات ومبتدعین

    ہندوستان میں دین میں بدعات واختراعات کی ترویج منظم انداز سے رائے بریلی سے شروع ہوئی ، ان بدعات وخرافات کی صدائیں بلند کرنے والا ایک غیر معروف شخص تها ، جس کا نام أحمد رضا بن نقي علي بن رضا علي بن كاظم علي بريلوي تها ، بریلوی فرقہ اسی شخص کی طرف منسوب ہے ، یہ شخص کسی باقاعدہ عربی مدرسہ یا دار العلوم کا تعلیم یافتہ نہیں تھا ، یہ شخص استعماری قوتوں کا بڑا وفادار تها ، اس شخص نے استعمار کے حکم سے بڑے کام کیے ، مختلف بدعات و شركيات وضلالات کو ناواقف لوگوں میں خوب پهیلایا ، ہندوستان میں نہ صرف تمام نامور علماء بلکہ دیگر مشاہیر کو بهی کافر ومشرک کہتا رہا ، ہندوستان میں استعماری قوتوں کے خلاف جو بهی دینی یا سیاسی تحریک اٹهی ، اس شخص نے اس تحریک کی بهرپور مخالفت کی ، اور ان سب پر تکفیر کے تیر برساتا رہا ، چونکہ ہندوستان میں مسلمانوں کی دینی وسیاسی وغیره ہرمیدان میں قیادت وراہنمائی علماء دیوبند کر رہے تهے ، لہذا اس شخص نے خصوصی طور پر علماء دیوبند کی ہرممکن مخالفت وعداوت میں کوئی کسر نہیں لیکن مرکزی کام جو رضا خان نے اور اس کے پیروکاروں نے کیا ،اور جس کے گرد فرقہ بریلویت اور مذہب رضانیت کی چکی اب تک گھومتی چلی آرہی ہے یہ ہیں
    1 = تکفیر امت یعنی اپنے مسلک کے سوا باقی تمام مسلمانوں کی اور بالخصوص علماء دیوبند کی تکفیر کرنا
    2 = استعمار کےخلاف اٹھنے والی ہر دینی وسیاسی تحریک کی بهرپور مخالفت کرنا اور ان پر کفر کے گولے برسانا
    3 = دین کے نام پر بے شمار بدعات وخرافات وضلالات کو بڑے زور وشور سے رواج دینا
    یہ تین باتیں رضاخانی مذہب کا حاصل وخلاصہ ونچوڑ وبنیاد ہے ، علماء دیوبند نے رضاخان اور اس کے بعض پیروکاروں کے رواج کرده بدعات وخرافات وضلالات وشرکیات وکذبات کی رد وتعاقب میں بے شمار مفصل ومختصر کتابیں لکهیں ہیں ، اور رضاخان اور اس کے ناواقف پیروکاروں پر ہر اعتبار سے حجت تمام کردی ہے ، چند مشہور کتب کا تذکره درج ذیل ہے


    1 = المہند علی المفند المعروف بالتصدیقات لدفع التلبیسات . مولانا خلیل احمد سہارنپوری رحمه الله
    2 = تنشیط الاذان . مولانا خلیل احمد سہارنپوری رحمه الله
    3 = الشهاب الثاقب على المسترق الكاذب . مولانا حسین احمد مدنی رحمه الله
    4 = الجنة لأهل السنة في جواب التحقيقات لدفع التحريفات . مولانا عبد الغنی پٹیالوی رحمه الله
    5 = بسط البنان . مولانا أشرف علي تهانوي رحمه الله
    6 = تغییر العنوان . مولانا أشرف علي تهانوي رحمه الله
    7 = دليل الخيرات في ترك المنكرات . مفتی کفایت اللہ رحمه الله
    8 = خیر الصلاۃ فی حکم الدعاء للاموات . مفتی کفایت اللہ رحمه الله
    9 = سوط الابرار بجواب کاشف الاسرار . مولانا عبد الغنی پٹیالوی رحمه الله
    10 = البراهین القاطعة علی ظلام الانوار الساطعة . مولانا خلیل احمد سہارنپوری رحمه الله
    11 = جُهد المقل . شیخ الہند مولانا محمود حسن دیوبندی رحمه الله
    12 = فتویٰ میلاد شریف . مولانا رشید احمد گنگوہی رحمه الله
    13 = بریلوی ترجمہ قرآن کا علمی جائزہ . مولانا اخلاق حسین قاسمی رحمه الله
    14 = دیوبند سے بریلی تک . مولانا ابو الاوصاف رومی رحمه الله
    15 = تزكية الخواطر عما ألقي في أمنية الأكابر . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    16 = توضيح البيان في حفظ الإيمان . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    17 = انتصاف البري من الكذب المفتري . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    18 = الختم على لسان الخصم . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    19 = اسكات المعتدي . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    20 = سبيل السداد في مسألة الإستمداد . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    21 = توضيح المراد لمن تخبط في الإستمداد . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    22 = الطين اللازب على الأسود الكاذب . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    23 = السوء النقم على مكفر نفسه من حيث لا يعلم المعروف بــ رد التكفير على الفحاش الشنطير . مولانا سيد مرتضى حسن چاند پوري رحمه الله
    24 = تبريد النواظر في تحقيق مسئلة الحاضر والناظر . مولانا سرفراز خان صفدر رحمه الله
    25 = دل كا سرور . مولانا سرفراز خان صفدر رحمه الله
    26 = راہ ہدایت بجواب نورِ ہدایت . مولانا سرفراز خان صفدر رحمه الله
    27 = تفریح الخواطر فی رد تنویر الخواطر . مولانا سرفراز خان صفدر رحمه الله
    28 = نور و بشر افادات. مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    29 = گلدستۂ توحید (تحقیق مسئلہ استعانت بغیر اللہ) . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    30 = ملا علی قاری اور مسئلہ علم غیب و حاضر و ناظر . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    31 = تنقید متین بر تفسیر نعیم الدین (ردِ شرک و بدعت) . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    32 = درود شریف پڑھنے کا شرعی طریقہ . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    33 = باب جنت بجواب راہِ جنت . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    34 = عبارات اکابر . مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله
    35 = سیف یمانی بر مکائد فرقہ رضا خانی . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    36 = معرکة القلم المعروف فیصلہ کن مناظرہ . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    37 = روئیداد مناظرہ بریلی المعروف فتح بریلی کا کلکش نظارہ ملقب بہ قلعہ رضا خانیت پر فیصلہ کن حملہ. مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    38 = صاعقۂ آسمانی روئیداد مناظرہ ضلع نینی تال . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    39 = صاعقۂ آسمانی دوم روائیداد مناظرہ علم غیب . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    40 = بارقہ آسمانی ضمیمہ صاعقہ آسمانی حصہ دوم . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    41 = سِتہ ضروریہ . مولانا منظور احمد نعمانی رحمه الله
    42 = مومن کی پہچان از روحِ قرآن . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    43 = ہدایات قادریہ اور ہماری گیارہویں شریف . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    44 = حاضر و ناظر . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    45 = تیجہ . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    46 = بوراق الغیب علی من یدعی لغیر اللہ علم الغیب . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    47 = حضرت شاہ اسماعیل شہید اور معاندین اہل بدعت کے الزامات . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    48 = عقیدہ علم غیب . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    49 = امعان النظر فی اذان القبر . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    50 = احکام النذور للاولیاء . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    51 = فتوحاتِ نعمانیہ (مختلف مناظروں کی روئیدادیں) . مولانا محمد منظور نعمانی رحمه الله
    52 = القسورۃ علی الحمیر المستنفرۃ . مولانا سید مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    53 = جیسی روح ویسے فرشتے . مولانا سید مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    54 = تحذیر الاخوان عن رضاء الشیطان . مولانا سید مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    55 = تهدید المنکرین لقدرۃ رب العالمین . مولانا سید مرتضی حسن چاندپوری رحمه الله
    56 = التحقیق النادر فی مسئلة الحاضر و الناظر . مولانا محمد ضیاء القاسمی رحمه الله
    57 = علمائے دیوبند کا مسلکی مزاج اور ان کا دینی رخ . قاری محمد طیب صاحب قاسمی رحمه الله
    58 = علم غیب . قاری محمد طیب صاحب قاسمی رحمه الله
    59 = سنت و بدعت اکابر صوفیاء کرام کی نظر میں . مفتی محمد شفیع رحمه الله
    60 = بشریت خیر الانام . مولانا عبد السلام رحمه الله
    61 = براهین اہل سنت حصہ اول . مولانا دوست محمد قریشی رحمه الله
    62 = آئینہ مذہب بریلویہ . مولانا محمد عبد اللہ درخواستی رحمه الله
    63 = بہتان عظیم . مولانا امیر علی قریشی رحمه الله
    64 = تکفیری افسانے . مولانا نور احمد رحمه الله
    65 = تلبیسات کنز الایمان . مولانا عبد المعبود رحمه الله
    66 = بریلوی فتنہ کا نیا روپ بجواب زلزلہ . مولانا عارف سنبھلی رحمه الله
    67 = توحید اور شرک کی حقیقت . مولانا نور الحسن شاہ بخاری رحمه الله
    68 = تحفہ لا ثانی بر فرقہ رضاخانی . مولانا عبد الشکور لکھنوی رحمه الله
    69 = نصرت آسمانی بر فرقہ رضا خانی . مولانا عبد الشکور لکھنوی رحمه الله
    70 = فتح حقانی بر فرقہ رضا خانی . مولانا عبد الشکور لکھنوی رحمه الله
    71 = صدائے حق . مولانا یعقوب مظاہری رحمه الله
    72 = فاضل بریلوی کے فقہی مقام کی حقیقت . مولانا محمد حامد میاں رحمه الله
    73 = نقد و تبصرہ بر کنز الایمان و خزائن العرفان . مولانا محمد حامد میاں رحمه الله
    74 = بریلوی فتوے . مولانا نور محمد رحمه الله
    75 = انکشافِ حق . مفتی خلیل احمد برکاتی رحمه الله
    76 = رضا خانی مذہب کامل دس جلد . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    77 = بریلوی مذہب کامل ۲ جلد . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    78 = حسام قادری کامل ۲ جلد . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    79 = فتاویٰ بریلوی . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    80 = تلبیسات کنز الایمان . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    81 = تلبیسات نور العرفان . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    82 = رضا خانیت اور تقدیس حرمین . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    83 = تعارف احمد رضا خان بریلوی . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    84 = مقیاس حنفیت کا تحقیقی جائزہ . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    85 = عید میلاد النبی صلی اللہ علیہ وسلم کی حقیقت . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    86 = مروجہ صلوٰۃ و سلام . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    87 = رضا خانی ختم شریف . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    88 = رضا خانی حقائق . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    89 = رضا خانیت اور مسئلہ مختار کل . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    90 = رضا خانیت اور مسئلہ نور . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    91 = رضا خانیت اور مسئلہ بشریت . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    92 = تعلیمات احمد رضا اور امتِ احمد رضا . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    93 = بیان الحق بجواب جاء الحق . مولانا سعید احمد قادری رحمه الله
    94 = چراغِ سنت . مولانا سید فردوس علی شاہ رحمه الله
    95 = الصلوٰۃ و السلام . مولانا سید فردوس علی شاہ رحمه الله
    96 = مقدمہ تحذیر الناس . علامہ ڈاکٹر خالد محمود حفظه الله
    97 = مطالعۂ بریلویت ۸ جلدیں . علامہ ڈاکٹر خالد محمود حفظه الله
    98 = شاہ اسماعیل شہید . علامہ ڈاکٹر خالد محمود حفظه الله
    99 = علم جنات و ملائکہ . علامہ ڈاکٹر خالد محمود حفظه الله
    100 = عالم الغیب صرف تعالیٰ کی ذات ہے . علامہ ڈاکٹر خالد محمود حفظه الله

    حرف آخر
    تلك آثـــــــارنا تدل علينـــــــا فانظروا بعدنـــــــا الى الآثـــــــار
    أولئك آبائي فجئني بمثلهم *** إذا جمعتنا يا جرير المجامع

    گذشتہ سطور میں مختلف موضوعات کے تحت علماء دیوبند کی چند علمی آثار وباقیات صالحات کا سرسری تذکره کیا گیا ، راقم الحروف اس بات کا اقرار واعتراف کرتا ہے کہ اس باب میں مکمل تفصیل واستیعاب اور ان اکابراعلام کی علمی خدمات کا احصاء واحاطہ میری وسعت میں نہیں ہے ، جن علمی آثار کا تذکره گذشتہ سطور میں کیا گیا وه سمندر کا ایک قطره ہے ، اور علماء دیوبند کی خدمات جلیلہ ومساعی جمیلہ کی طرف محض ایک اشاره ہے ، اور اس مختصر بحث میں صرف اکابر ومشائخ دیوبند کی بعض مشہور کتب کا تذکره کیا گیا ، اور کسی بهی عنوان کے تحت جن کتب کا تذکره کیا گیا ہے وه حتمی تعداد نہیں ہے ، علماء دیوبند کی تمام تر زندگی کتاب وسنت اور علوم وفنون اور اسلام اوراہل اسلام کی خدمات سے منور وروشن ہے ، قرآن مجید کی تعلیم وتدریس ہو ترجمہ وتفسیر ہو طباعت وکتابت ہو حفاظت واشاعت ہو احادیث رسول کا درس وتدریس ہو شرح وحاشیہ ہو نشرواشاعت ہو نصرت وحمایت ہو مسائل فقہیہ کی ترویج وتصحیح ہو یا تعلیم وتبلیغ ، الغرض ہند و پاک میں خصوصا اور پورے عالم میں عموما اسلام اوراہل اسلام کی مذہبی دینی ، علمی ، تفسیری ، حدیثی ، تشریحی ، فقہی ، تبلیغی اصلاحی ،اخلاقی ، روحانی ، سیاسی ان تمام میدانوں میں نمایاں حصہ اکابرعلماء دیوبند اوران کے متعلقین کا ہے ، جس کی ادنی سی جهلک گذشتہ سطور میں آپ نے ملاحظہ کرلی ، اور اس پوری بحث کا مقصد یہ ہے کہ ان اکابراعلام وافاضل كرام کے معتقدین کو خصوصا اور دیگر لوگوں کو عموما ان اکابر کی قدر ومنزلت اور عندالله مقبولیت ومحبوبیت کا علم ہو جائے ، اور ان سے تعصب وعداوت رکهنے والے جهلاء کو نصیحت ہوجائے ، یقینا ایک صاحب بصیرت آدمی ان علمی آثار کی قدرشناسی کرے گا ، اور جوآدمی علم وبصیرت سے محروم ہے وه ان علمی آثار کی قدر کیا جانے ، اوراگرتم چاہتے ہو کہ ایسے مردانِ خدا کی زیارت کرو ، جوالله تعالی کے نزدیک مقبولیت و وجاهت رکهتے ہوں ، مگرانسانوں میں گمنامی کو پسند کرتے ہوں تو اکابرعلماء دیوبند کو جاکر دیکهو ، اگرصحف ومجلات اوراخبار وجرائد میں ان کا ذکرنہیں ، تو نہ ہو ان کا ذکر خیرمخلوق کی زبانوں پر ہے ، قلوب صافیہ ان کی محبت وعقیدت کی گواہی دیتے ہیں ، کائنات کے بینات اورعالم کے صحیفے ان کے شاہد ناطق ہیں ، ان کی علمی جواہر وباقیات صالحات کے سبب ان کا ذکر خیر تا قیامت ہوتا رہے گا ، اگر ان کی عظیم الشان وفقید المثال اعمال وخدمات سے کچهہ لوگ جاہل یا متجاہل ہیں ، تو کچهہ افسوس وشکایت نہیں ، کیونکہ جوچیز الله تعالی کے پاس ہے وه زیاده پائیدار ہے ، آسمان علم وفضل کے ان روشن ستاروں نے اپنی بے پناه خدمات سے شرق وغرب کو اور پورے عالم کو نور علم سے جگمگایا ، علم وفضل ورشد وخیر کا آفتاب اپنے مطلع سے طلوع ہو چکا ، اور تمام اقطار ہند اور پوری زمین کے اطراف واکناف کو منور کیا اوراب تک کر رہا ہے ، اور اس کے انوارو برکات نے آفاق وبلاد کو روشن کیا اوراب تک کر رہے ہیں ، اور ان شاء الله یہ روشنی صفحات ایام پر مسلسل پهیلتی جائے گی .

    وأسأل الله تعالى بفضله وكرمه ورحمته أن يغفر لنا ويرحمنا ويهدينا سبيل الرشاد ورحم الله هؤلاء الأئمة الأخيار وأساطين العلم والإسلام وأعلى الله درجاتهم وضاعف حسناتهم وتغمدهم بغفرانه وطيب ثراهم وأكرم مثواهم واجعل الجنة مستقرهم ومأواهم واجمعنا معهم في دار كرامته وفي جنات النعيم أجمعين أللهم أمين
    كتبه العبد الجاني المسيء الغريق في بحار العصيان المدعو بـــ حافظ محمد خان عفا عنه الرحمن بوسيلة سيد الإنس والجان
    Last edited by Hafiz M Khan; 03-16-2013 at 03:45 PM.

  14. The Following User Says Thank You to Hafiz M Khan For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  15. Join Date
    Mar 2008
    Posts
    35
    Thanks
    2
    Thanked 0 Times in 0 Posts

    علماء دیوبند ka koi sani nehi (mujuda doar main)

  16. Join Date
    Dec 2008
    Posts
    1,153
    Thanks
    4
    Thanked 85 Times in 53 Posts

    Bohat ala boht khub jazakallah magar esay Shan-e-ulma-e-DEOBAND section may hona chaye..
    ap ki taraf say mazeed malumat ka intazar rahe ga.
    قادیان کا آوارہ نبی
    قادیانیوں کو دعوت اسلام

  17. The Following User Says Thank You to Sajid Naqshbandi For This Useful Post:

    Farrukh Thanvi (11-03-2013)

  18. Join Date
    Oct 2009
    Location
    PLANET EARTH
    Posts
    394
    Thanks
    0
    Thanked 6 Times in 5 Posts




  19. Join Date
    Oct 2009
    Posts
    224
    Thanks
    0
    Thanked 11 Times in 9 Posts

    هل لك أن تكتبها باللغة العربية , بارك الله فيك ؟
    ما لَذّةُ العَيشِ إلّا صُحبَةُ الفُقَرَا***هُمُ السَّلَاطِينُ والسّاداتُ والأُمَرَا
    فاصحَبهُمُ وتَأدّب فِي مَجَالِسِهِم***وَخَلّ حَظَّكَ مَهمَا قَدّمُوكَ وَرَا

  20. Join Date
    May 2010
    Posts
    73
    Thanks
    0
    Thanked 10 Times in 6 Posts

    سبحان اللہ ماشاءاللہ اللہ اکبر
    ہمیں علماۓ حق سے محبت ہے

    اللہ پاک حق کا بول بالا فرمائیں

  21. Join Date
    Jul 2010
    Posts
    168
    Thanks
    0
    Thanked 0 Times in 0 Posts

    اسسلا معلیکم

    جزاکاللہ حافظ بھائی کافی علمی اورمعلوماتی مضمون تھا حافظ بھائی مضمون کو جاری رکھے معلومات مے کافی اضافہ ہورہا ہے
    .
    اگر اسمے علماےدیوبند نے جوغیر موقلدین پرکتابے لکھی اسکا بھی ذکر ہوتا تو اور اچھا ہوتا
    .

+ Reply to Thread

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts